ریاست نے نواز شریف کی گرفتاری کے بعدمطلوبہ مقاصد حاصل کر لئے، میاں افتخار حسین
الیکشن اور اس کے من پسند نتائج، سپیکر شپ ، وزارت عظمی اور دیگر مراحل اپنی منشا کے مطابق طے کئے گئے۔
سزا معطلی کا فیصلہ اپوزیشن اتحاد کی مری اے پی سی میں نواز شریف کے ساتھ انصاف کیلئے مشترکہ قراردادکی تائید ہے۔

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے نواز شریف اور ان کی فیملی کی سزا معطل کرنے کے فیصلے پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ نوازشریف اور ان کی فیملی کی گرفتاری جن مقاصد کیلئے ریاست نے وہ مقاصد حاصل کر لئے ہیں اب تو ظاہر ہے معاملہ رہائی کی طرف ہی جائے گا، انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو گرفتار کر کے الیکشن اور اس کے من پسند نتائج، سپیکر شپ ، وزارت عظمی اور دیگر مراحل ریاست نے اپنی منشا کے مطابق طے کئے ،میاں افتخار حسین نے کہا کہ اپوزیشن اتحاد کی مری آل پارٹیز کانفرنس میں ایک قرارداد مشترکہ طور پر پیش کی گئی تھی جس میں مطالبہ کیا گیا تھا کہ نواز شریف اور ان کی فیملی کے ساتھ انصاف کیا جائے اور انہیں آئینی تحفظ فراہم کیا جائے ، انہوں نے کہا کہ رہائی کا فیصلہ اے پی سی کی قرارداد کی تائید ہے تاہم لازم ہے کہ جو کیسز بنائے گئے تھے انہیں اب ختم ہونا چاہئے اور آئینی تقاضے پورے کرتے ہوئے نواز شریف اور ان کی فیملی کے ساتھ انصاف ہونا چاہئے۔