یوٹیلٹی سٹورز ملازمین کے جائز مطالبات تسلیم کئے جائیں، ایمل ولی خان
کم آمدنی والے طبقات کی آخری امید کو حکومت نے منصوبہ بندی کے تحت دیوالیہ کیا۔ 
غیر ملکی مالیاتی اداروں کے دباؤ پر کارپوریشن کی نجکاری کا فیصلہ کیا گیاہے۔ 
نجکاری کے عمل سے ہزاروں خاندان فاقوں کی دہلیز پرآ جائیں گے۔
حکومت لچک کا مظاہرہ کرے ، اے این پی ہر سطح پر جائز مطالبات کی حمایت کرتی ہے۔

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ مزدوروں اور کم آمدنی والے طبقات کی آخری امید یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن کو حکومت نے منصوبہ بندی کے تحت دیوالیہ کروایا۔حکومت نے غیر ملکی مالیاتی اداروں کے دباؤ پرسالانہ8ارب ٹیکس ادا کرنے والی کارپوریشن کی نجکاری کا فیصلہ کیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ حکومتیں،غریب اور کم آمدنی والے شہریوں کو سستی خوراک مہیا کرنے کیلئے زیادہ سے زیادہ وسائل مہیا کرتی ہیں مگر حکومت نے غریب دشمنی میں یوٹیلٹی سٹوروں کی ممکنہ نجکاری کا فیصلہ کر کے غریب آدمی کا معاشی قتل عام کر رہی ہے ،انہوں نے کہاکہ یوٹیلٹی سٹورکارپوریشن سے 15ہزار ملازمین کا روزگار وابستہ ہے اور نجکاری کے عمل سے ہزاروں خاندان فاقوں کی دہلیز پرآ جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے ملازمین اور ادارے کے مستقبل پرتلوار لٹکا رکھی ہے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت یوٹیلٹی سٹور کارپوریشن کے حوالے سے رویے میں لچک کا مظاہرہ کرے اور ملازمین کے جائز مطالبات تسلیم کرتے ہوئے پائی جانے والی بے چینی کا خاتمہ کرے،انہوں نے کہا کہ ملکی معیشت تباہی کے دہانے پر کھڑی ہے ،ایسے میں حکمران اس مسئلے کا فوری اور سنجیدہ حل تلاش کریں۔ایمل خان نے کہا کہ یوٹیلٹی سٹور ملازمین کے مطالبات جائز ہیں اور اے این پی ہر سطح پر جائز مطالبات کی حمایت کرتی ہے۔