حاجی محمد عدیل جمہوریت پسندی اور قوم پرستی کا روشن ستارہ تھے، حاجی غلام احمد بلور
مرحوم نے جمہوریت کی بقا اور صوبائی خودمختاری کی جنگ میں کبھی سودے بازی نہیں کی۔
ساتویں این ایف سی ایوارڈ او18 ویں ترمیم میں بنیادی کردار کا سہرا حاجی عدیل مرحوم کے سر ہے۔
جمہوری جدوجہد کے ہیرو کی مسلسل جدوجہد سیاست کے میدان میں مشعل راہ ہے۔بیٹے اور بیوہ سے تعزیت
مولانا حاجی عبدالوہاب کی وفات سے ملک اور پورا خطہ جید عالم دین سے محروم ہو گیا ہے۔

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی قائمقام صدر حاجی غلام احمد بلور نے کہا ہے کہ این ایف سی ایوارڈ اور اٹھارہویں ترمیم کی منظوری میں جو کردار حاجی محمد عدیل مرحوم نے ادا کیا وہ تاریخ کا انمٹ باب ہے،جمہوریت کی بقا اور صوبائی خودمختاری کی جنگ میں کبھی سودے بازی نہیں کی اور مرحوم پارٹی پالیسیوں پر تادم مرگ کاربند رہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرحوم حاجی عدیل کی دوسری برسی کے موقع پر ان کی رہائشگاہ پر مرحوم کے بیٹے اور بیوہ سے تعزیت کے دوران کیا ، حاجی غلام احمد بلور نے کہا کہ اے این پی خدائی خدمت گار تحریک کی تسلسل جماعت ہے جس نے ہمیشہ صوبے کے عوام کے حقوق اور ان کے تحفظ کو اپنا مشن بنائے رکھا اور مرحوم حاجی محمد عدیل اس مشن کی سرپرستی کرتے رہے،قائمقام صدر نے کہا کہ حاجی عدیل ایک ایسے انسان کے فرزند تھے جنہوں نے انگریز سامراج کے خلاف بھر پور جدوجہد کی۔ اور وہ بھی اپنے والد کے نقش قدم پر چلتے ہوئے باچا خان بابا کی تحریک کا سپاہی بن کر پوری زندگی اْسی میں گزار دی۔ انہوں نے کہا کہ حاجی محمد عدیل کا انتقال قوم کے لئے بڑا نقصان ہے۔انہوں نے کہا کہ ساتویں این ایف سی ایوارڈ اور بجلی منافع کے بقایا جات کے علاوہ 18 ویں ترمیم میں بنیادی کردار کا سہرا حاجی عدیل مرحوم کے سر ہے، اْنہوں نے کہا کہ حاجی عدیل مرحوم جیسے حقیقی سیاسی رہنما صدیوں میں پیدا ہوتے ہیں۔ حاجی محمد عدیل مرحوم جمہوری جدوجہد کے ہیرو تھے۔ ان کی مسلسل جدوجہد سیاست کے میدان میں مشعل راہ ہے۔
دریں اثنا ء حاجی غلام احمد بلور نے تبلیغی جماعت کے سربراہ مولانا حاجی عبدالوہاب کے انتقال پر بھی دکھ اور افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ پاکستان سمیت پورا خطہ ایک جید عالم اور مبلغ اسلام سے محروم ہو گیا ہے ، انہوں نے مرحوم کے خاندان اور تبلیغی جماعت کے تمام پیروکاروں سے دلی تعزیت اور ہمدردی کا اظہار کیا اور کہا کہ مولانا مرحوم نے اپنی زندگی دین اسلام کی تبلیغ و ترویج کیلئے وقف کر رکھی تھی اور نا کی وفات بلا شبہ بڑا نقصان ہے، انہوں نے مرحوم کی مغفرت اور پسماندگان کے صبر جمیل کیلئے بھی دعا کی۔