اسفندیارولی خان کا کراچی میں خطاب

قبائلیوں میں بے چینی شدید تر ہوتی جارہی ہے فاٹا کی محرومیوں کا جلد از از جلد ازالہ کیا جائے، اسفندیارولی خان

کراچی ۔27 مارچ 2018
عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی خان نے کہا ہے کہ چاہے کتنا ہی بڑا رہنماء کیو ں نا ہو، تنظیمی نظم و ضبط سے بالاتر نہیں ہوسکتا، فاٹا کے تمام مسائل کا حل خیبر پختون خوا میں انضمام سے وابستہ ہے، فاٹا انضمام کے مطالبے سے ایک قدم بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے، آئندہ عام انتخابات سے قبل فاٹا کو خیبر پختون اسمبلی میں مناسب نمائندگی دی جائے، فاٹا کے عوام کوپشاور ہائی کورٹ تک رسائی دی جائے، آپریشن سے بے گھر ہونے والے قبائلیوں کی جلد از جلد باعزت واپسی یقینی اور نقصانات کا مناسب ازالہ کیا جائے، قبائلیوں میں بے چینی شدید تر ہوتی جارہی ہے فاٹا کی محرومیوں کا جلد از از جلد ازالہ کیا جائے، کسی صورت باچا خان بابا کے عدم تشدد کے راستے کو نہیں چھوڑیں گے، باچا خان اور ولی خا ن بابا کے افکار کی روشنی میں پختونوں اور تمام مظلوم قومیتوں کی بقاء کی جدوجہد جاری رکھیں گے، عوامی نیشنل پارٹی ہو یا نیپ کبھی مصلحتوں کا شکار نہیں ہوئی، فاٹا کے خیبر پختون خوا کے انضمام کے حوالے سے جلد ایک اور آل پارٹیز کانفرنس کا انعقاد کیا جائے گا، چار اپریل بروز بدھ ولی باغ میں طلب کیے گئے پارٹی کے مرکزی تھنک ٹینک کے اجلاس میں مشاورت کے بعد حتمی تاریخ کا اعلان کیا جائے گا۔
ان خیالات کا اظہار اانہوں نے مردان ہاؤس میں پارٹی ذمہ داران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ علالت کے باوجود کارکنان کے خلوص و محبت کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے اجلاس طلب کیا ہے۔ متحدہ مجلس عمل کی بحالی پر انہوں نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پانچ برسوں تک مولانا فضل الرحمٰن اور سراج الحق کو اسلام کی کوئی فکر نہیں تھی، پانچ برسوں سے سراج الحق عمران خان کے اتحاد ی ہیں اور مولانا فضل الرحمٰن نواز شریف کے اتحادی ہیں۔ مولانا فضل الرحمٰن عمران خان کو برا بھلا کہتے رہے اورسراج الحق نواز شریف پر کرپشن کے الزمات لگاتے رہے اقتدار کے خاتمے کے ایام قریب آتے ہی دونوں کواسلام یاد آگیا۔ ایم ایم اے کی بحالی اسلام کے لیے نہیں بلکہ اسلام آباد کے لیے ہے۔ محمود خان اچکزئی کی فاٹا انضمام کی مخالفت سمجھ سے بالاتر ہے۔ فاٹا کا خیبر پختون خوا میں انضمام کے بعد پختون قومی وحدت کے قیام کے لیے بھر پور جدوجہد کا آغاز کریں گے۔ پہلے تو صرف گھوڑے فروخت ہوتے تھے سینیٹ انتخابات میں پورے کے پورے اصطبل فروخت ہوئے۔ سینیٹ انتخابات میں خیبر پختون خوا میں عوامی نیشنل پارٹی کے علاوہ تمام سیاسی جماعتوں کے ارکان اسمبلی نے اپنا ضمیر کا سودا کیا۔ زرداری صاحب کو ایک کریڈٹ ضرور دوں گا کہ سینیٹ کے ڈپٹی چیئرمین کے لیے پی ٹی آئی سے ووٹ لیکر عمران خان کو بے نقاب کیا۔ سینیٹ انتخابات میں تحریک انصاف نے مولانا سمیع الحق کے ساتھ سنگین دھوکہ کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ پر امید ہیں کہ آئندہ عام انتخابات میں ہمیں لیول پلیئنگ فیلڈ میسر ہوگی۔ کراچی کے پختونوں کا عظیم الشان جلسہ عام منعقد کریں گے۔ کارکنان اپنی تیاریاں شروع کردیں کراچی کے پختونوں آپ کی پہچان سرخ جھنڈا ہے اپنی پہچان کے لیے سرخ جھنڈے تلے متحد ہوجائیں۔