سینیٹ الیکشن میں خرید و فروخت سیاست پر دھبہ ہے،سردار حسین بابک

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ سینیٹ الیکشن میں بدترین ہارس ٹریڈنگ ہوئی اور ارب پتی و کروڑ پتی امیدوار میدان میں اتارے گئے ، گھوڑوں کی خرید و فروخت مستقبل میں ممبران اسمبلی کیلئے نیک شگون نہیں، سینیٹ الیکشن میں جماعت اسلامی کے ساتھ اتحادپر ان کا شکریہ ادا کرتے ہیں، 
ان خیالات کا اظہار انہوں نے سینیٹ الیکشن میں حمایت پر شکریہ ادا کرنے کیلئے آنے والے جماعت اسلامی کے صوبائی امیر مشتاق احمد خان اور پارلیمانی لیڈر عنایت اللہ خان کے ہمراہ باچا خان مرکز میں ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،سردار حسین بابک نے کہا کہ دولت کی چمک اے این پی کے نظریے کو خیرہ نہیں کر سکی اور اے این پی اور اس کے اتحادیوں نے اربوں کی ریل پیل کو حقیقی معنوں میں شکست دی،انہوں نے کہا کہ پارٹی وفاداری پر ثابت قدمی کا ثبوت دیا ہے ، اور جمہوری معاشرے میں سیاسی جماعتوں کا آپس میں رابطوں کا سلسلہ جاری رہنا چاہئے ، انہوں نے کہا کہ سیاسی رابطوں کا تسلسل ملک و قوم کیلئے ضروری ہے ،انہوں نے باچا خان مرکز آنے والے جماعت اسلامی کے وفد اور سینیٹ الیکشن میں حمایت کرنے والی جماعت ن لیگ کا شکریہ ادا کیا اور کہا تمام سیاسی جماعتیں اگر نظریاتی کارکنوں کو سامنے لائیں تو ہارس ٹریڈنگ کا راستہ روکا جا سکتا ہے،انہوں نے کہا کہ سینیٹ الیکشن میں سیاست بدنام ہوئی ہے اور اس سلسلے کو روکنے کیلئے سب کو اپنا کردار ادا کر نا ہوگا ، جماعت اسلامی کے وفد نے بھی الیکشن میں حمایت کرنے پر اے این پی کی تمام قیادت کا شکریہ ادا کیا ،انہوں نے کہا کہ ضمیروں کا سودا کرنے والوں نے جمہوریت پر خود کش حملہ کیا ہے لہٰذا سپریم کورت کو اس حوالے سے نوٹس لینا چاہئے،ایک سوال کے جواب میں سردار حسین بابک نے کہا کہ اے این پی نے سیاست میں کبھی دروازے بند نہیں کئے اور آئندہ الیکشن میں اس وقت کی صورتحال کے مطابق کسی جماعت سے اتحاد کا فیصلہ کیا جائے گا۔

 

Post by ANP.