حکومتی ٹائم سکیل اساتذہ کے مستقل سروس سٹرکچر اور چار درجاتی فارمولے کو رول بیک کرنے کی سازش ہے،سردار حسین بابک

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ اساتذہ کیلئے اے این پی دور میں کی گئی اپ گریڈیشن ، پروموشن ، سروس سٹرکچر اور چار درجاتی فارمولے پر کوئی آنچ نہیں آنے دیں گے، موجودہ حکومت کے اعلان کردہ ٹائم سکیل پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ اساتذہ کیلئے قابل قبول اور مستقل سروس سٹرکچر کی موجودگی میں ٹائم سکیل سے شکوک و شبہات پیدا ہو گئے ، انہوں نے کہا کہ حکومت نے ٹائم سکیل کا اعلان کر کے مستقل سروس سٹرکچر اور چار درجاتی فارمولے کو رول بیک کرنے کی سازش کی ہے جو ہم کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔انہوں نے کہا کہ حکومت اپنے ٹائم سکیل کی ضرورت اور اس کی افادیت کی وضاحت کرے کیونکہ صوبے بھر کے اساتذہ میں اس اعلان سے بے چینی پھیلی ہوئی ہے، سردار بابک نے کہا کہ سروس سٹرکچر اور چار درجاتی فارمولے کی وجہ سے صوبے کے مڈل ، ہائی اور ہائیر سیکنڈری سکولوں میں ہزاروں اسامیاں پُر ہو گئی ہیں،انہوں نے کہا کہ تبدیلی سرکار نے تعلیمی ایمرجنسی کے نام پر اپنے پانچ سالہ دور اقتدار کے آخری ایام میں اساتذہ کو ورغلانے کی کوشش کی ہے تاہم صوبے کے اساتذہ اس ناعاقبت اندیش حکومت کے اقدام سے با خبر ہیں ، انہوں نے کہا کہ حکومت کے پاس اساتذہ کو دینے کیلئے کچھ نہیں تھا اور اب ان سے جائز حق بھی چھیننے کی کوشش کر رہی ہے،انہوں نے کہا کہ اے این پی نے اپنے دور میں اساتذہ کی 60سالہ محرومیوں کا ازالہ کر کے ان کے مطالبات تسلیم کئے جو اب حکومت پھر سے رول بیک کرنے کے درپے ہے لیکن اے این پی اساتذہ کے خلاف کیا جانے والا کوئی اقدام کامیاب نہیں ہونے دے گی۔