اے این پی کا صوبائی اسمبلی میں توجہ دلاؤ نوٹس

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی نے پاکستان انسٹیٹیوٹ آف پروستیٹک اور آرتھوٹک سائنسزکے ملازمین کی مستقلی کیلئے صوبائی اسمبلی میں توجہ دلاؤ نوٹس جمع کرا دیا ہے،اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری و پارلیمانی لیڈر سردار حسین بابک نے توجہ دلاؤ نوٹس کے ذریعے ج صوبائی اسمبلی کے سپیکر کی توجہ اس اہم عوامی مفاد کے مسئلے کی جانب دلائی ہے کہ پاکستان انسٹیٹیوٹ آف پروستیٹک اور آرتھوٹک سائنسز(PIPOS) صوبائی حکومت کے زیر انتظام ایک خود مختار ادارہ ہے اور کئی برس سے معذور افراد کے علاج اور مصنوعی اعضاء کی فراہمی کیلئے سرگرم ہے ، انہوں نے کہا کہ صوبے میں بدامنی ، دہشت گردی اور آءئے روز ایکسیڈنٹ کے واقعات سمیت دیگر کئی اہم وجوہات کی وجہ سے معذور افراد کی شرح میں اضافہ ہوا ہے اور ادارے کے90فیصد ملازمین کنٹریکٹ پر کام کرتے ہوئے انتہائی جانفشانی سے اپنے فرائض انجام دے رہے ہیں جبکہ صوبائی حکومت کی جانب سے ادارے کو نظر نداز کرنے کے ساتھ ساتھ کوئی فنڈز نہیں دیئے جا رہے ، انہوں نے کہا کہ صوبے کے آٹھ اضلاع ڈی آئی خان، بونیر، بنوں، پشاور، تیمرگرہ،سوات ، مردان اور ہنگو میں اس ادارے کے سینٹرز کام کر رہے ہیں،انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت اس ادارے کے کنٹریکٹ ملازمین کومستقل اور ادارے کو فنڈز جاری کرنے کے احکامات جاری کرے تاکہ یہ ادارہ صوبے کے طول وعرض میں معذار افراد کی بحالی اور ان کے علاج معالجے کا سلسلہ جاری رکھ سکیں۔ سردار حسین بابک نے کہا کہ ان ملازمین نے قیمتی وقت ادارے کی کارکردگی بہتر بنانے کے لئے صرف کیا اور پوری ایمانداری سے اپنی ذمہ داریاں سر انجام دیں،انہوں نے کہا کہ یہ سب سفید پوش ملازمین متوسط طبقے سے تعلق رکھتے ہیں جن کی تنخواہوں سے ان کے گھروں کے چولھے جلتے ہیں اور جب ادارے کے ملازمین ذہنی طور پراپنی نوکریوں کومحفوظ محسوس کریں گے تو ان کی کارکردگی مزید بہتر ہو سکے گی جس کا براہ راست اثر ادارے کی کارکردگی پر پڑ ے گا۔