کرپشن اور کمیشن کی سیاست کرنے والوں کی شکست نوشتہ دیوار ہے ، سردار حسین بابک

اقتدار میں آنے کے بعد2013میں تعمیر وترقی کے رکے ہوئے سفر کا دوبارہ آغاز کریں گے۔

ہم پر الزامات لگانے والوں کے خلاف ان کی اپنی کرپشن کی فائلیں کھل گئی ہیں۔

حکومت میں آنے کے بعد اے این پی دور کے ماڈل پولیس سٹیشن کے قیام کا منصوبہ دوبارہ شروع کریں گے۔

اے این پی دور میں پولیس نظام میں بہتری و لاجسٹک سپورٹ فراہم کرنا تاریخی اقدامات ہیں۔

تعلیمی نصاب میں جدید دور کے مطابق تبدیلی لائی جائے گی، پی کے 22میں انتخابی مہم کے دوران خطاب

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرتری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ صوبے میں حقیقی تبدیلی اے این پی اپنے گزشتہ دور میں لا چکی ہے اور اقتدار میں ؤنے کے بعد2013میں تعمیر وترقی کے رکے ہوئے سفر کا دوبارہ آغاز کریں گے ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنی انتخابی مہم کے دوران یو سی ناواگئی پی کے 22بونیر میں شمولیتی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر مختلف سیاسی جماعتوں کی سرکردہ شخصیات نے اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا ،سردار حسین بابک نے پارٹی میں شامل ہونے والوں کو سرخ ٹوپیاں پہنائیں اور انہیں قافلے میں شامل ہونے پر مبارکباد پیش کی ، انہوں نے کہا کہ ہم پر الزامات لگانے والوں کے خلاف ان کی اپنی کرپشن کی فائلیں کھل گئی ہیں اور پانچ سال تک کرپشن اور کمیشن کی سیاست کرنے والے اب عوام کا سامنا نہیں کر سکیں گے ، سردار حسین بابک نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت صوبے کی بد ترین حکومت تھی یہی وجہ ہے کہ انہیں باہر سے کسی مخالف کی ضرورت نہیں وہ ایک دوسرے کے خلاف ہی کافی ہیں ،انہوں نے کہا کہ حکومت میں آنے کے بعد اے این پی دور کے ماڈل پولیس سٹیشن کے قیام کا منصوبہ شروع کریں گے تاکہ اپنے صوبے کی پولیس فورس کی تمام ضروریات و سہولیات کو پورا کیا جا سکے ، انہوں نے کہا کہ اے این پی دور میں پولیس کی تعداد میں خاطر خواہ اضافہ ، تنخواہیں بڑھانا، لاجسٹک سپورٹ فراہم کرنا، سہولیات اور مراعات دینا تاریخی اقدامات ہیں اور دوبارہ اقتدار میں آ کر محکمہ پولیس کی نچلی سطح کے کانسٹیبلان سے افسران تک مستقل سروس سٹرکچر کو عملی طور پر یقینی بنائیں گے .انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنی پولیس فورس پر فخر ہے اور مستقبل میں جرائم کی روک تھام اور امن کی مستقل بحالی کیلئے پولیس فورس کو درپیش تمام رکاوٹیں دور کرکے تمام ضروریات رجیحی بنیادوں پر پوری کریں گے ۔ سردار حسین بابک نے کہا کہ تعلیمی نصاب میں جدید دور کے مطابق تمام سٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے تبدیلی لائی جائے گی جبکہ بنیادی تعلیم مادری زبان میں رائج کی جائے گی،انہوں نے کہا کہ اے این پی ماضی میں بھی اس حوالے سے سنجیدگی کے ساتھ کام کرتی رہی ہے اور دوبارہ اقتدار میں آ کر اپنے گزشتہ دور حکومت میں قائم ریجنل لینگویجز اتھارٹی کو مزید مضبوط اور مؤثر بنایا جائے گا۔