چیلنج قبول ہے ،کپتان کا مردان میں پاور شو فلاپ ہو گیا، امیر حیدر خان ہوتی

اے این پی کے خاتمے کے دعوے کرنے والوں نے تسلیم کرلیا کہ ان کا مقابلہ اے این پی کے ساتھ ہے۔

اقتدارمیں آکر سابق حکمرانوں سے پائی پائی کا حساب لیں گے، کپتان نے سیاست سے اخلاقیات کا جنازہ نکال دیا۔

سابق حکومت کی غیر ذمہ دارانہ اور غیر سنجیدہ پالیسیوں کی وجہ سے صوبہ مالی بحران کا شکار ہوا ۔

سابق حکومت نے اپنے دور میں پختون نوجوانوں کے مسائل کی طرف توجہ نہیں دی۔

اے این پی کامیابی کے بعد بے روزگاری کے خاتمے پر توجہ دے گی۔ہوتی ہاؤس میں شمولیتی تقریب سے خطاب

پشاور( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیرحیدرخان ہوتی نے کہاکہ عمران خا ن کا مردان میں پاور شو مکمل طورپر ناکام رہا ، اے این پی کے خاتمے کے جھوٹے دعوے کرنے والے سابق وزیراعلیٰ پرویز خٹک کے باس نے تسلیم کرلیاہے کہ ان کا مقابلہ اے این پی کے ساتھ ہے ،ہمیں کپتان کا چیلنج قبول ہے،ہماری پارٹی نام نہاد تبدیلی اوردہشت گردوں کے سامنے چٹان کی طرح میدان میں کھڑی ہے ،اقتدارمیں آکر سابق حکمرانوں سے پائی پائی کا حساب لیں گے کپتان نے سیاست سے اخلاقیات کا جنازہ نکال دیاہے، باچاخان کے پیروکاردلیل ،شرافت ،خدمت، محبت اورامن کا دامن تھامے ہوئے ہیں صوبے میں اب باچاخانی کا راج ہوگا ، وہ اپنی رہائش گاہ ہوتی ہاؤس مردان میں شمولیتی اجتماع سے خطاب کررہے تھے جس میں سینکڑوں افرا دنے مختلف پارٹیوں سے مستعفی ہوکر اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا،پارٹی کے صوبائی نائب صدر حاجی محمد جاوید اورجنرل سیکرٹری حاجی لطیف الرحمان سمیت دیگر رہنما بھی موجود تھے امیرحیدرخان ہوتی نے انہیں پارٹیاں ٹوپیاں پہنائیں اور مبارک بادیتے ہوئے کہاکہ عوامی نیشنل پارٹی پر پختونوں کا اعتماد بڑھ گیاہے اورانہیں خوشی ہے کہ نام نہاد تبدیلی کے ڈھونگ رچانے والوں کی اصلیت جان کر باچاخانی کی طرف تیز ی سے آرہے ہیں انہوں نے کہاکہ عمران خان کا مردان کاجلسہ بری طرح ناکام ہوا ان کا تھنک ٹینک چند سو افراد کو بھی نکال نہ سکا، انہوں نے کہاکہ پرویز خٹک اے این پی کے خاتمے کے دعوے کرتے رہے آج کپتان خود کہہ رہے ہیں کہ ہمارا مقابلہ عوامی نیشنل پارٹی کے ساتھ ہے ہمیں عمران خان کا چیلنج قبول ہے اورانشاء اللہ انہیں 25جولائی کو باچاخانی کی طاقت کا اندازہ ہوجائے گا، انہوں نے کہاکہ عمران خان سیاسی کارکنوں کے بارے میں اپنے رویے پر نظرثانی کریں، انہوں نے سیاست میں اخلاقیات کاجنازہ نکال دیاہے ،امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ سابق حکومت کی غیر ذمہ دارانہ اور غیر سنجیدہ پالیسیوں کی وجہ سے صوبہ مالی بحران کا شکار ہوا ، سابق وزیر اعلیٰ نے صوبے کے ساتھ ساتھ اپنے ہی حلقہ کے عوام کی تذلیل کی اور انہیں ان کے جائز حقوق سے محروم رکھا ، انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی صوبائی حکومت نے اپنے پانچ سالہ دور میں ایک لمحے کے لئے بھی پختون نوجوانوں کے مسائل کی طرف توجہ نہیں دی، انہوں نے نوجوان ہمارا قیمتی سرمایہ ہے اور اے این پی کامیابی کے بعد بے روزگاری کے خاتمے پر توجہ دے گی اور نوجوانوں کو 10لاکھ تک بلاسود قرضے فراہم کرے گی تاکہ وہ اپنے لئے روزگار کے مواقع پیدا کر سکیں، انہوں نے کہا کہ اے این پی حکومت میں آ کر عوام کی محرومیوں کا ازالہ کرے گی ۔