ریاستی ادارے انتخابی امیدواروں کو تحفظ فراہم کرنے میں اپنا کردار ادا کریں ، ایمل ولی خان
اکرام اللہ گنڈاپور پر حملہ قابل مذمت ہے جس شخص پر الزام ہے اس سے تحقیقات ہونی چاہئے۔
مجھے نقل و حرکت محدود کرنے کا کہا گیا ہے لیکن ڈرنے والا نہیں ہوں الیکشن میں حصہ لے رہا ہوں۔
دہشت گردی کی حالیہ لہر الیکشن سبوتاژ کرنے اور ایک مخصوص شخص کو کھلا میدان دینے کیلئے جاری ہے۔
صوبے کے عوام خزانہ لوٹنے اور پشاور کو کھنڈر بنانے والوں کو مسترد کر دیں گے، صحافیوں سے بات چیت

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ اکرام اللہ گنڈاپور پر حملہ قابل مذمت ہے اور جس شخص پر الزام ہے اس سے تحقیقات ہونی چاہئے ،دہشت گردی کسی بھی صورت میں ہو اے این پی اس کی مذمت کرتی ہے اور ہم اپنی دھرتی پر امن چاہتے ہیں، دہشت گردی کا ہر واقعہ ایک جیسا نہیں ہوتا مجھے نقل و حرکت محدود کرنے کا کہا گیا ہے لیکن ڈرنے والا نہیں ہوں الیکشن میں حصہ لے رہا ہوں اور کامیابی کے بعد پر امن خطے کے قیام کیلئے جدوجہد جاری رکھیں گے ، چارسدہ میں اخبار نویسوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اکرام اللہ گنڈاپور کی شہادت کا دکھ صرف ہم محسوس کر سکتے ہیں کیونکہ دہشت گردی کے خلاف اے این پی نے تقریباآ ایک ہزار کارکنوں اور ارکان اسمبلی کی قربانی دی ہے ، انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کی حالیہ لہر الیکشن سبوتاژ کرنے اور ایک مخصوص شخص کو کھلا میدان دینے کیلئے جاری ہے ، انہوں نے کہا کہ اگر ایسا ہے تو الیکشن اس کیلئے بہترین عمل ہے جو بھی شفاف انتخابات میں منتخب ہو اسے اقتدار حوالے کر دیا جائے ، ایمل ولی خان نے کہا کہ ریاستی ادارے تمام انتخابی امیدواروں کو تحفظ فراہم کرنے میں اپنا کردار ادا کریں ،دہشتگردوں کے حلیے اور نام تک بھی معلوم ہو تو انہیں روکنے میں کیا قباحت ہے، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اے این پی 25جولائی کو بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کرے گی اور صوبے کے عوام خزانہ لوٹنے اور پشاور کو کھنڈر بنانے والوں کو مسترد کر دیں گے ، انہوں نے کہا کہ گزشتہ پانچ سال میں سابق حکومت نے صوبے کو اربوں روپے کا مقروض کر دیا اور پختون قوم تبدیلی کے نام پر وسائل لوتنے والوں کا احتساب کریں گے۔