تین اداروں نے سازش کے تحت عوام کے مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالا ،سردار حسین بابک
لاڈلے کو پوری قوم پر زبر دستی مسلط کرنے کی غرض سے جمہوریت کے خلاف سازش کی گئی۔
الیکشن کے نام پر قوم کو دھوکہ دیا گیا ، سازش میں الیکشن کمیشن،نگران حکومت اور دیگر ادارے بھی شامل ہیں۔
عوام میدان میں آئیں اور عوامی نمائندگی پر ڈاکہ ڈالنے والی قوتوں کے خلاف متحد ہو جائیں۔
پختون قیادت پر گہری سازش کے ذریعے پارلیمنٹ کے دروازے بند کئے گئے۔
دوبارہ گنتی کی درخواستیں مسترد ہوئیں تو آر اوز دفاتر کا گھیراؤ کیا جائے گا۔
عدالیہ ،نگران حکومت اور فوج سے پاک انتخابات کی ضرورت ہے۔بونیر میں احتجاجی مظاہرے سے خطاب 

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ تین اداروں نے مل کر سازش کے تحت عوام کے مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالا ہے جس کے خلاف بھرپور مزاحمت کی جائے گی ،ایک لاڈلے کو پوری قوم پر زبر دستی مسلط کرنے کی غرض سے جمہوریت کے خلاف سازش کی گئی ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے حالیہ الیکشن میں دھاندلی کے خلاف بونیر میں احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اے این پی بونیر کے ضلعی صدر محمد کریم بابک،این اے9سے سابق امیدوار حاجی رؤف خان اور دیگر رہنماؤں نے بھی مظاہرین سے خطاب کیا ، سردار حسین بابک نے کہا کہ لاڈلے کو زبردستی مسلط کرنے کے فیصلے کو پاکستانی قوم قبول نہیں کرے گی،انہوں نے کہا کہ الیکشن کے نام پر قوم کو دھوکہ دیا گیا اور اس سازش میں الیکشن کمیشن،نگران حکومت اور دیگر ادارے بھی شامل ہیں،انہوں نے کہا کہ بونیر میں لوٹے کو ٹکٹ دیا گیا جسے اس حلقے میں کوئی نہیں جانتا پھر بھی اسے58ہزار ووٹ ڈلوائے گئے،سردار حسین بابک نے کہا کہ عوام میدان میں آئیں اور عوامی نمائندگی پر ڈاکہ ڈالنے والی قوتوں کے خلاف متحد ہو جائیں ، انہوں نے کہا کہ تمام پختون قیادت کے خلاف ملکی اداروں نے سازش کی اور گہری سازش کے ذریعے ان پر پارلیمنٹ کے دروازے بند کئے گئے ہیں تاکہ لاڈلے سے اپنی مرضی کا ایجنڈا پورا کرایا جا سکے،انہوں نے کہا کہ چار روز میں قومی و صوبائی اسمبلی کے12حلقے کھلے جن میں دوبارہ گنتی کے نتیجے میں پی ٹی آئی کو شکست کا سامنا کرنا پڑا جس کے بعد دوبارہ گنتی کی درخواستیں مسترد کر دی گئیں ، انہوں نے واضح کیا کہ امیدوار دوبارہ کاؤنٹنگ کیلئے درخواستیں جمع کرائیں اور اگر درخواستیں مسترد کی گئیں تو آر اوز کے دفاتر کا گھیراؤ کیا جائے گا۔ سردار حسین بابک نے کہا کہ عدالیہ ،نگران حکومت اور فوج سے پاک انتخابات کی ضرورت ہے۔