اے این پی کو ڈرا دھمکا کر دیوار سے نہیں لگایا جا سکتا ، امیر حیدر خان ہوتی

تشدد کا جواب تشدد سے نہیں دیں گے ، ہارون بلور کی قربانی رائیگاں نہیں جائے گی۔

پشاور ،بنوں اور مستونگ بم دھماکے قابل مذمت ہیں ،نوشہرہ کو مثالی ضلع بنائیں گے ،

حکومت میں آ کر بے روزگاری کے خاتمے کیلئے ہر حد تک جائیں گے۔

خود روزگار سکیم کی کامیابی کیلئے نوجوانوں کو بلا سود قرضے فراہم کئے جائیں گے۔

شاہراہوں کی تعمیر اور پشاور میٹرو ترقیاتی منصوبوں میں سر فہرست ہونگے۔شیدو نوشہرہ میں جلسہ عام سے خطاب

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ پشاور دھماکہ قابل مذمت ہے اور ہارون بلور کی قربانی رائیگاں نہیں جانے دی جائے گی ، 25جولائی کو کامیابی حاصل کر کے دشمن کو شکست دیں گے ، اگر کسی کا یہ خیال ہو کہ وہ ہمیں ڈرا کر میدان سے آؤٹ کر دے گا تو یہ اس کی بھول ہے ، میدان خالی نہیں چھوڑیں گے ،صوبہ معاشی طور پر دیوالیہ ہے اورخالی خزانے کو اپنے پیروں پر کھڑا کر کے پختونوں تک ترقی و خوشحالی کے ثمرات پہنچائیں گے، فرد واحد کیلئے نہیں بلکہ قوم کی بقاء کیلئے اتحاد و اتفاق کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے ، حکومت میں آ کر مرکز کے پاس رہ جانے والے صوبے کے حقوق حاصل کریں گے ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے شیدو نوشہرہ میں شمولیتی جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اے این پی کے امیدوار اور ضلعی صدر ملک جمعہ خان اور خلیل عباس خٹک نے بھی اس موقع پر خطاب کیا ،جلسہ میں پشاور ،بنوں اور مستونگ دھماکوں کی مذمت کی گئی اور تمام شہداء کے ایصال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کی گئی ، امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہہم باچا خان بابا کے عدم تشدد کے فلسفے کے پیروکار ہیں اور تشدد کا جواب تشدد سے دینے کی بجائے عدم تشدد کا ہتھیار اپنائیں گے،انہوں نے کہا کہ ڈرنے اور جھکنے والے نہیں ،الیکشن میں جائیں گے اور کامیاب ہو کر نوشہرہ ہسپتال کو جدید بنیادوں پر استوار کیا جائے گا تاکہ یہاں سے مریضوں کو پشاور منتقل نہ کرنا پڑے ، انہوں نے کہا کہ اے این پی حکومت میں آ کر عوام کی محرومیوں کا ازالہ کرے گی، ہر ضلع میں ایک یونیورسٹی اور ہر حلقہ میں ایک کالج کے وعدے کو عملی جامہ پہنائے گی ، مرکزی سے اپنے حقوق حاصل کریں گے اور ترقی کے نئے دور کا آغاز کریں گے، انہوں نے کہا کہ اے این پی کامیابی کے بعد بے روزگاری کے خاتمے پر توجہ دے گی اور نوجوانوں کو 10لاکھ تک بلاسود قرضے فراہم کرے گی تاکہ وہ اپنے لئے روزگار کے مواقع پیدا کر سکیں، امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ اے این پی حکومت میں آ کر بی آر ٹی مکمل کرے گی ،انہوں نے یاد دلایا کہ اے این پی نے اپنے دور حکومت میں حیات آباد سے چارسدہ روڈ تک رنگ روڈ کی بحالی کا کام کیا اور اب دوبارہ چمکنی تا چارسدہ روڈ اور سدرن بائی پاس کی تعمیر یقینی بنائیں گے تاکہ ارد گرد کے علاقوں کو لنک کیا جا سکے ، انہوں نے پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں پر زور دیا کہ الیکشن کی بھرپور تیاریاں جاری رکھیں اور عوام اپنے حقوق کے تحفظ اور اپنی آئندہ نسلوں کی بقا کیلئے اے این پی کو کامیاب کریں۔