پنجاب یونیورسٹی کے گرفتار طلباء رہا کر کے مقدمات ختم کئے جائیں میاں افتخار حسین
پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے پنجاب یونیورسٹی میں پختون اور بلوچ طلباء پر تشدد کی شدید مذمت کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ گرفتار طلباء کو رہا کر کے تمام مقدمات ختم کئے جائیں ، ان خیالات کا اظہار انہوں نے باچا خان مرکز میں پختون سٹوڈنٹس فیڈریشن کی مرکزی آرگنائزنگ کمیٹی کے چیئرمین حق نواز خٹک کی قیادت میں ملنے والے وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ، وفد میں پختون ایس ایف کی صوبائی آرگنائزنگ کمیٹی کے چیئرمین توحید داؤدزئی ،سیکرٹری ارمان بیٹنی اور ممبر ساجد علی بھی موجود تھے، پختون ایس ایف کے وفد نے میاں افتخار حسین کو جامعہ پنجاب میں پیش آنے والے واقعے کی تفصیلات سے آگاہ کیا ، 
میاں افتخارحسین نے واقعہ پر شدید تشویش کا اظہار کیااور تمام بے گناہ طلبہ کو جلد ازجلد رہا کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر پنجاب حکومت پختونوں اور بلوچ طلباء کے ساتھ امتیازی سلوک روا رکھے گی تو اس کا نقصان پورے ملک کو ہوگا اور ایسے واقعات سے نفرت پھیلے گی۔انہوں نے کہا کہ تعلیمی اداروں کا وقار بحال رہنا چاہئے اور واقعے میں گرفتار کئے گئے تمام طلبہ کو جلد از جلد باعزت رہا کیا جائے اور تمام مقدمات واپس لیے جائے۔ میاں افتخار حسین نے کہا کہ تعلیمی اداروں کا ماحول پرامن ہونا چاہئے تاکہ طلبہ تعلیم جاری رکھ سکیں، انہوں نے کہا کہ ایسے واقعات سے طلباء کا قیمتی وقت ضائع ہوتا ہے،لہٰذا طلباء کو دیگر سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ تعلیم پر خصوصی توجہ دینی چاہئے۔