کراچی میں پی ایس ایف کی تقریب

کراچی۔ پختون اسٹوڈنٹس فیڈریشن کے تحت فاٹا کے خیبر پختون خوا میں انضمام کے حوالے سے فاٹا یکجہتی کانفرنس کا انعقاد

 
کراچی.عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکریٹری یونس خان بونیری نے کہا ہے کہ فاٹا کے خیبر پختون خوا میں انضمام کی مخالفت فاٹا سے ایف سی آر کے خاتمے کو پس پشت ڈالنے کی کوشش ہے ملک کی تمام سیاسی جماعتیں ، شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد ، طلباء سمیت واضح اکثریت فاٹا کی خیبر پختون خوا میں انضمام کے حق میں ہے 
فاٹا کا خیبر پختون خوا میں انضمام ایک فطری عمل ہے ڈیڑھ انچ کی سیاسی عمارت کو خطرہ محسوس کرنے والے اس کی مخالفت کررہے ہیں فاٹا سے ایف سی آر کا خاتمہ ایک انسانی مسئلہ ہے موجودہ دور میں کوئی بھی ریاست اپنے شہریوں کو وکیل و دلیل کے حق سے محروم رکھنے کا تصور بھی نہیں کرسکتی موجودہ دور تقسیم کی لکیریں ختم کرنے کا دور ہے اہم قومی مسئلے پر سیاست چمکانے کے بجائے فاٹا کے مسائل کا حل چاہتے ہیں پختون قومی وحدت کا قیام ہمارے اکابرین کا دیرینہ مطالبہ رہا ہے انضمام کے حق میں فاٹا پارلیمینٹرین کی قرار داد رکارڈ پر ہے ضرورت اس امر کی ہے کہ ٖفاٹا کے نمائندوں کے مطالبے کو پورا کیا جائے آئندہ انتخابات سے قبل فاٹا کو خیبر پختون خوا اسمبلی میں نمائندگی دی جائے ان خیالات کااظہار انہوں نے باچا خان مرکز میں پختون اسٹوڈنٹس فیڈریشن کے تحت منعقدہ فاٹا یکجہتی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، انہوں نے مذید کہا کہ کامیاب کانفرنس کے انعقاد پر پختون اسٹوڈنٹس فیڈریشن کو مبارک باد پیش کرتے ہیں نظریاتی و فکری تحریک کی نشانی ہوتی ہے کہ اس کا نوجوان قومی مسائل کو اجاگر کرتا ہے افسوس کی بات یہ ہے کہ لوگ پاکستان کے آئین کے تحت زندگی گزارا چاہتے ہیں لوگ اس کی مخالفت کرتے ہیں ہمارا مطالبہ ہے کہ وفاقی حکومت اپنی بنائی گئی فاٹا اصلاحاتی کمیٹی کی سفارشات پر عمل کرے اور ٖفاٹا کو قومی دھارے میں شامل کرے دو فیصد مراعاتی طبقے کے تحفظ کے بجائے قبائل کو پتھر کے زمانے کے قوانین سے چھٹکارا دیا جائے اس موقع پر پختو ن اسٹوڈنٹس فیڈریشن کے قائدین شیر آفریدی، جہانزیب بونیری ، سید شاہد محمود پارٹی کے رہنماء رانا گل آفریدی اور نیشنل یوتھ آرگنائزیشن کے رہنماؤں ، علی رحمان موسیٰ خیل قدوس برقی نے بھی خطاب کیا ، کانفرنس کے بعد باچا خان مرکز میں فاٹا کے خیبر پختون خوا کے انضمام کے حق میں دستخطی مہم کا آغاز کیا ۔