پارلیمنٹ پر لعنت بھیجنے والوں کا مستقبل پارلیمنٹ میں دکھائی نہیں دے رہا ، امیر حیدر خان ہوتی

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ پر لعنت بھیجنے والے آئندہ الیکشن میں بھی عوام کے ہاتھوں رسوا ہوں گے اور کپتان کا وزیر اعظم بننے کا خواب کبھی پورا نہیں ہو سکے گا، ان خیالات کا اظہار انہوں نے صوابی جگناتھ میں ایک بڑے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اے این پی صوابی کے صدر و ضلع ناظم امیر الرحمن خان اور جنرل سیکرٹری محمد اسلام خان سمیت دیگر مقامی قائدین بھی اس موقع پر موجود تھے،امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ اے این پی نے اپنے دور میں صوابی میں بے شمار ترقیاتی کام کئے تاہم انتہائی افسوس کا مقام ہے کہ آج صوابی کو بنی گالہ اور میانوالی سے کنٹرول کیا جا رہا ہے جو یہاں کے عوام کے مینڈیٹ کی توہین ہے ، انہوں نے کہا کہ 20سال قبل پی ٹی آئی سے وفا کرنے والے آج کہاں کھڑے ہیں ان کی پارٹی میں کوئی جگہ نہیں کیونکہ پی ٹی آئی پر جاگیرداروں اور لوٹوں کا قبضہ ہے اور وفاداروں کو کھڈے لائن لگا کر سرمایہ دار طبقے کو ٹکٹ دیئے جا رہے ہیں ،انہوں نے عمران خان کی جانب سے پارلیمنٹ پر لعنت بھیجنے کے اعلان کی بھی مذمت کی اور کہا جس پارلیمنٹ کا وہ خود حصہ ہیں اور جس پارلیمنٹ سے وزارت عظمی کی توقع رکھتے ہیں اسی پر لعنت بھی بھیجتے ہیں اللہ انصاف کرنے والا ہے اور2018کے الیکشن میں موصوف اس پارلیمنٹ سے باہر ہو جائینگے،انہوں نے کہا کہ جس ملک میں مفادپرست اقتدار کی ہوس لئے پھر رہے ہیں وہ ملک باچا خان بابا کی کاوشوں اور قربانیوں سے آزاد ہوا ہے ، اس وقت صرف خدائی خدمت گاروں نے جانوں کے نذرانے پیش کئے ، امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ کالاباغ ڈیم کا راستہ روکنے والی واحد جماعت اے این پی ہے اورکسی مفاد پرست نے اس وقت کالاباغ ڈیم کی مخالفت نہیں کی تھی، اسی طرح ملک میں جب بھی کسی ڈکٹیٹر نے شب خون مارا تو اے این پی نے کسی غیر جمہوری عمل کا ساتھ نہیں دیا بلکہ ہمیشہ ڈکٹیٹر شپ کے خلاف ڈٹی رہی،صوبائی صدر نے کہا کہ تمباکو سیس کی رقم صرف صوابی پر خرچ کرنے کی منظوری دینے کا سہرا اے این پی کے سر ہے جبکہ آج صوابی کے عوام کو بے یارومددگار چھوڑ دیا گیا ہے اور ضلع میں ہمارے تمام منصوبوں پر اپنی تختیاں لگا رہے ہیں، انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت صوبے کے حقوق کے تحفظ میں ناکام ہو چکی ہے اور اے این پی دوبارہ اقتدار میں آکر این ایف سی ایوارڈ حاصل کرے گی اور وفاق سے صوبے کے تمام حقوق حاصل کئے جائیں گے ، انہوں نے کہا کہ ایکسپریس وے اور موٹر وے قرضوں پر نہیں بنائیں گے بلکہ صوبے کو معاشی طور پر اتنا مضبوط کر دیں گے کہ بیرونی سرمایہ کار خود یہاں سرمایہ کاری کو ترجیح دیں گے،انہوں نے کہا کہ سرکاری ملازمتوں کی بجائے خود روزگار سکیموں کو ترجیح دینگے اور اس مقصد کیلئے نوجوانوں کو بلا سود قرضے فراہم کئے جائیں گے،انہوں نے کہا کہ عوام اسفندیار ولی خان کی قیادت میں سرخ جھنڈے تلے متحد ہو جائیں اور اپنے حقوق کے تحفظ کیلئے اے این پی کو کامیاب کریں۔