پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ حلقہ پی کے 22 کی ترقی و خوشحالی اولیں ترجیح ہے اور علاقے کی پسماندگی دور کرنے کیلئے تمام ممکنہ اور ٹھوس اقدامات کئے جائیں گے،ان خیالات کا اظہار انہوں نے یو سی امازی گاؤن ڈھنڈار بونیر میں بڑی شمولیتی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر عمران اور ظاہر شاہ کی قیادت میں درجنوں افراد نے جماعت اسلامی سے مستعفی ہو کر اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا، سردار حسین بابک نے پارٹی میں شامل ہونے والوں کو سرخ ٹوپیاں پہنائیں اور انہیں باچا خان بابا کے قافلے میں شامل ہونے پر مبارکباد پیش کی ، اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ اے این پی پختون قوم کی نمائندہ جماعت ہے جس نے ہر دور اور ہر فورم پر پختون قوم کے لئے آواز آٹھائی ہے۔انہوں نے کہاکہ اپوزیشن میں ہونے کے باوجود پی کے 22کے عوام کے لئے تر قیاتی کاموں کا پیکچ منظور کر ونگا اور یہاں کے عوام کی پسماندگی دور کر ونگا۔انہوں نے کہاکہ اے این پی نے اپنے سابقہ دور اقتدار کے دوران یہاں کے عوام کو در پیش مسائل و مشکلات ختم کر نے کے لئے بے پناہ تر قیاتی منصوبے مکمل کئے ہیں اور ان شاء اللہ آئندہ بھی یہاں کے عوام کے مسائل حل کر ے گی۔انہوں نے مذید کہاکہ دیگر سیاسی جماعتوں کے پاس عوامی مسائل کے حل کے لئے کوئی جامع منصوبہ بندی نہیں۔سردار حسین بابک نے کہاکہ حکومت کو اقتدار میں آئے چار ماہ ہونے کو ہیں لیکن آج تک عوام کی بھلائی اور فلاح کیلئے کچھ نہیں کیا، تبدیلی کے نعرے لگانے والوں نے عوام سے جینے کا حق چھین لیا ہے اور آئے روز اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں اضافہ کیا جا رہا ہے ۔انہوں نے کہاکہ اے این پی نے اپنے دور اقتدار کے دوران صوبائی خو دمختاری کے لئے این ایف سی ایوارڈ حاصل کیا لیکن بد قسمتی سے موجودہ حکومت این ایف سی ایوارڈ ختم کر نے کے لئے سازشیں کرر ہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ حکومت ٹھیکیداروں کے30ارب روپے کی مقروض ہے جس کے خلاف صوبے کے ٹھیکیدار احتجاج پر مجبور ہیں۔انہوں نے کہاکہ اے این پی نے اپنے دور اقتدار کے دوران تمام تر نامساعد حالات کے باوجود تر قیاتی کام مکمل کئے ،شمولیتی اجتماع سے اے این پی کے ضلعی صدر محمد کر یم بابک،نائب ناظم مندنڑ اشتر خان،ناظم یوسی آمازی درویش خان،افضل خان،زمان خان،سید معمبر باچا،بخت منیر اور نصیب خان کے علاوہ کار کنوں نے کثیر تعداد میں شر کت کی۔