پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی نے صوبائی اسمبلی میں قرارداد جمع کرائی ہے جس میں مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے گاؤں کوگا ضلع بونیر میں گزشتہ35سال سے 14سو کنال پر محیط افغان مہاجرین کا کیمپ قائم ہے جس کا مالکان کو معاوضہ ادا نہیں کیا جا رہا جبکہ دوسری جانب اس کا معاوضہ انتہائی کم مقرر کیا گیا ہے ، قردارداد اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری و پارلیمانی لیڈر سردار حسین بابک نے جمع کرائی اور اس میں وفاقی حکومت سے سفارش کی گئی کہ متذکرہ بالا گاؤں کے زمین مالکان کی انتہائی قیمتی اور قابل کاشت زمین گزشتہ 35برس سے افغان مہاجر کیمپ کے استعمال میں ہے جس کا معاوضہ مالکان کو کئی سال سے ادا نہیں کیا جا رہا جبکہ مقرر کردہ معاوضہ بھی انتہائی کم ہے ، انہوں نے کہا کہ قابل کاشت اور انتہائی قیمتی زمین مہاجر کیمپ کے استعمال میں ہونے کا اثر زمینداروں مالی حالات پر پڑرہا ہے، حکومت مفاد عامہ کے اس اہم مسئلے کا نوٹس لے اور اراضی مالکان کو معاوضہ کی ادائیگی کیلئے فوری اقدامات کرے، انہوں نے مزید کہا کہ علاقہ کوگا اور چملہ کیلئے خصوصی ترقیاتی پیکج کا اعلان بھی کیا جائے تاکہ گاؤں اور علاقے کے لوگوں کی دادرسی ہو سکے۔