خیبر پختونخوا کو گیس کی عدم فراہمی ، اے این پی نے صوبائی اسمبلی میں قرارداد جمع کرا دی
قرارداد اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک اور خوشدل خان ایڈوکیٹ نے جمع کرائی ۔
مرکزی حکومت سے خیبر پختونخوا کی پیداواری گیس صوبے کے تمام اضلاع کو فراہمی یقینی بنانے کا مطالبہ ۔

خیبر پختونخوا کے تقریباً تمام اضلاع گیس کی سہولت سے محروم ہیں ، عوام لکڑیوں کا استعمال کر رہے ہیں۔
آئین کے آرٹیکل158میں واضح طور پر گیس کی پیداوار اور اس کی تقسیم کے حوالے سے تحریر موجود ہے۔
حکومت شجرکاری مہم پر اربوں روپیہ لگانے کی بجائے تمام اضلاع کوگیس فراہمی یقینی بنانے کیلئے اقدامات کرے۔
پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی نے صوبے کو اس کی پیداواری گیس میں جائز حق نہ ملنے کے خلاف صوبائی اسمبلی میں قرارداد جمع کرائی ہے جس میں صوبائی حکومت پر زور دیا گیا ہے کہ مرکزی حکومت سے آئین کے آرٹیکل158کے تحت خیبر پختونخوا کی پیداوار گیس صوبے کے تمام اضلاع کو فراہمی یقینی بنانے کا مطالبہ کرے ،قرارداد اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری اور اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر سردار حسین بابک اور رکن اسمبلی خوشدل خان ایڈوکیٹ نے جمع کرائی ، قرارداد میں مزید کہا گیا ہے کہ آئین پاکستان میں واضح الفاظ میں تحریر ہے کہ گیس جس صوبے کی پیداوار ہو گی سب سے پہلے اسی صوبے کی ضرورت پوری کی جائے گی تاہم آج تک خیبر پختونخوا کے تقریباً تمام اضلاع گیس کی سہولت سے محروم ہیں اور وہاں غریب عوام جلانے کیلئے لکڑیوں کا استعمال کر رہے ہیں جس کیلئے جنگلات کی بے دریغ کٹائی جاری ہے، سردار حسین بابک نے کہا کہ حکومت دانشمندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے شجرکاری مہم پر اربوں روپیہ لگانے کی بجائے صوبے کے کونے کونے میں گیس فراہمی یقینی بنانے کیلئے اقدامات کرے ، انہوں نے کہا کہ جنگلات کٹائی سے بچ جائیں تو صوبہ خود بخود گرین بیلٹ بن جائیگا۔