وزیراعلی اور ان کی حکومت اعتماد کھوچکی ہے، صوبائی اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ لیں۔ سردارحسین بابک

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی خیبر پختونخوا کے جنرل سیکرٹری سردارحسین بابک نے کہا ہے کہ وزیراعلی پرویز خٹک کو صوبائی اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ لے لینا چاہئے۔ اپنے ایک اخباری بیان میں انہوں نے کہا کہ پختونخوا اسمبلی میں وزیراعلی اور حکومت اپنا اعتماد کھو چکی ہے۔ ڈپٹی اسپیکر کا عہدا خالی پڑا ہے، حکومت اسمبلی کے اندر اور باہر بری طرح ناکام ہوچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اخلاقی طور پر وزیراعلی کو صوبائی اسمبلی کے ارکان کا سامنا کرلینا چاہئے اور دیکھ لینا چاہئے کہ انہیں 122 ارکان کے ہاوس میں کتنے ممبران سپورٹ کررہے ہیں؟ دوسروں پر الزامات لگانے والے، کیچڑا چھالنے والے اور دن رات شفافیت، انصاف اور احتساب کے نعرے لگانے والے خود اس پر کتنا عمل پیرا ہیں؟
سردارحسین بابک کا کہنا تھا کہ اپوزیشن جماعتیں بہت جلد صوبے کو درپیش مسائل اور مشکلات پر مبنی ایجنڈے کے تحت اجلاس بلانے کیلئے ریکوزیشن جمع کرائینگے۔ انہوں نے کہا کہ صوبے میں ائیندہ بھی حکومت بنانے کے دعوے کرنے والی صوبائی حکومت ذرا موجودہ اسمبلی میں اپنی مقبولیت کا اندازہ لگائیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ بدقسمتی سے روز اول سے وزیراعلی پرویز خٹک اور صوبائی حکومت اپنے ممبران اور وزراء کا اپنی ہی حکومت پر الزامات کا جواب دینے کی قابل نہیں رہی ہے۔ دوسری طرف سارے صوبے کے تمام محکموں کے ملازمین سراپا احتجاج ہیں اور حکومت کو اتنی توفیق نصیب نہیں ہورہی کہ ان کے ساتھ بیٹھ کر حل طلب مطالبات اور مسائل پر بات کرسکیں۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے صوبے کو مسائل کے دلدل میں دھکیل کر اس صوبے کے خزانے کو کنگال کردیا ہے اور صوبے کی تاریخ کا بہت بڑا قرضہ لے کر صوبے کے عوام کو قرضوں کے بوجھ تلے دبا دیا ہے۔ صوبے کے وسائل اور آمدن کو اپنوں میں بانٹنے کے ساتھ صوبے کو مالی طور پر دیوالیہ اور انتظامی طور پر بدحال بنادیا ہے۔