تورغر جلسہ

کرپٹ حکمرانوں نے 4سال عوام کی خدمت کے بجائے دھرنوں پر ضائع کر دئے، امیر حیدر خان ہوتی

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت نے خیبر پختونخوا کےعوام کے چار قیمتی سال دھرنوں اور الزام تراشیوں میں ضائع کر دئیے، مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی کی جنگ تخت اسلام آباد کے لیے ہے، پختونخوا کے عوام کی خدمت اور ترقی میں انہیں کوئی دلچسپی نہیں ہے، جو شخص اپنا گھر نہیں سنبھال سکتا وہ ملک کیا چلائے گا، تور غر میرا دوسرا گھر ہے، آج تور غر کے غیرت مند، وفادار، مخلص، باجرأت پختونوں نے میرا سر فخر سے بلند کر دیا ہے،ان خیالات کا اظہار صوبائی صدر امیر ھیدر خان ہوتی نے کنڈر حسن زئی تور غر میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیاجلسے میں ریکارڈ تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔ اس موقع پر تحصیل ناظم کنڈر حسن زئی سید شہزاد شاہ، امیدوار قومی اسمبلی نیاز خان، اے این پی ضلع مانسہرہ کے صدر سرور خان، مرکزی نائب صدر لالہ اورنگزیب، حاجی جمال، اے این پی ضلع بٹگرام کے صدر آیاز خان، اے این پی شانگلہ کے رہنماءسدیدالرحمان، نائب صدر ضلع تورغر سید نواب گل سمیت سرکردہ شخصیات سٹیج پر موجود تھیں۔ جلسہ سے سابق ایم این اے اور امیدوار صوبائی اسمبلی لائق محمد خان، اے این پی ضلع تورغر کے صدر زرگل جمال حسن زئی، اصغر خان، عزیزخان، اکرم خان اور دیگر رہنماﺅں نے بھی خطاب کیا۔ امیر حیدر خان ہوتی نے اپنے خطاب میں کہا کہ پرویز خٹک جیسے لوگوں نے خیبر پختونخوا کے عوام کے چار قیمتی سال دھرنوں اور الزام تراشیوں میں ضائع کر دئےے۔ عمران خان دوسروں کی ذات پر توکیچڑ اچھالتا ہے مگر خیبر پختونخوا میں پی ٹی آئی کے اپنے ایم پی اےز وزراءکو کرپٹ کہہ رہے ہیں، وزراءایم پی ایز کو کرچور کہہ رہے ہیں، وزیر اعلیٰ اپنے وزراءکو چور کہتے ہیں جبکہ وزراءایم پی ایز کہتے ہیں کہ کرپشن میں وزیراعلیٰ کا ہاتھ ہے لیکن عمران خان کو یہ سب کچھ نظر نہیں آرہا ہے اور دوسروں کو برا بلا کہتا ہے۔ حقیقت یہ ہے کہ جو شخص اپنا گھر نہیں سنبھال سکتا وہ ملک کیا چلائے گا۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی کی جنگ تخت اسلام آباد کے لیے ہے، پختونخوا کے عوام کی خدمت اور ترقی میں انہیں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ تور غر میرا دوسرا گھر ہے، میں نے اس چھوٹے سے علاقے کو ضلع کا درجہ دیا، ہزاروں نوکریاں اور چار ارب روپے کا پیکج دیا مگر آج کا تاریخی جلسہ اور آپ لوگوں کا جوش و جزبہ، ولولہ، اخلاص، محبت دیکھ کر میں کہتا ہوں کہ اگر آپ کو دس ارب کا پیکج بھی دے دیتا تو یہ کم تھا۔ امیر حیدر خان ہوتی نے جلسہ میں لوگوں کے جوش و خروش اور شاندار استقبال پر انہیں خراج تحسین پیش کیااور کہا کہ آج تور غر کے غیرت مند، وفادار، مخلص، باجرأت پختونوں نے میرا سر فخر سے بلند کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تورغر جلسہ کے معاملہ پر مجھے طرح طرح کی کی باتوں کا سامنا کرنا پڑا مگر اس بار میں نے قسم اٹھائی تھی کہ کچھ بھی ہو جائے جلسہ میں ضرور شرکت کروں گا۔