بڈھ بیر مریم زئی

پنجاب میں ناکامی کا سامنا کرنے والوں نے این اے4کا رخ کر لیا ہے، میاں افتخار حسین

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے کہا کہ موجودہ حکومت کی غیر سنجیدہ اور غیر مناسب رویے اور سیاسی سکورنگ کی وجہ سے عوام اْن سے نالاں ہیں اور حکمران ہر محاذ پر ناکام ہو چکے ہیں ، صوبے کی ترقی اے این پی کا مشن ہے اوراین اے 4کے ضمنی الیکشن میں کامیابی کے بعدحلقے کی ترقی اور عوام کے احساس محرومی کا خاتمہ اولیں ترجیح ہو گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے این اے4کی انتخابی مہم کے دوران بڈھ بیر یو سی مریم زئی میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر مختیار خان ایڈوکیٹ سمیت دیگر رہنماؤں نے بھی خطاب کیا ۔میاں افتخار حسین نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ صوبائی حکومت عوامی مسائل حل کرنے میں ناکام ہو چکی ہے ،اور صوبے کو مسائل کی دلدل میں دھکیل دیا گیا ہے،انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا کے عوام تبدیلی کی حقیقت جان چکے ہیں اور وہ سرکاری مشینری اور وسائل کو عمران خان کے جنون کیلئے استعمال کرنے کو کبھی معاف نہیں کریں گے، انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت نے نہ صرف مرکز سے صوبے کے حقوق اور حصہ حاصل کیا بلکہ بیرونی مالیاتی اداروں کے اعتماد کی وجہ صوبے میں ترقی کا مثالی دور شروع کر دیا تھا۔ اْنہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے موجودہ حکومت کے غیر سنجیدہ پالیسیوں کی وجہ سے خیبر پختونخوا مشکلات میں گھر چکا ہے۔ نااہل حکومت نے خزانہ خالی کر دیا ہے اور اب ملازمین کو تنخواہوں کی ادائیگی تک کیلئے اْن کے پاس پیسے نہیں ہیں، انہوں نے کہا کہ پنجاب میں ناکام ہونے والوں نے ایک بار پھر این اے4کا رخ کر لیا ہے ، چار سال تک صوبائی اور مرکزی حکومتوں نے این اے4کو نظر انداز کیا اور اب ایک بارپھر ٹرانسفارمرز کی سیاست کرنے این اے4کا رخ کر لیا ہے ،ضمنی الیکشن میں اے این پی کی کامیابی یقینی ہے۔ میاں افتخار حسین نے کہا کہ ناکام صوبائی حکومت نے عوام کو بے حال کر دیا ہے اور موجودہ صورتحال میں پختون جنازے اٹھانے پر مجبور ہیں، ڈینگی نے صوبائی حکومت کی کارکردگی کا پول تو کھول دیا ہے تاہم سزا غریب عوام کو بھگتنا پڑی،انہوں نے کہا کہ ڈینگی سے ہونے والی اموات میں دن بدن اضافہ ہوتا جا رہا ہے لیکن صوبائی حکومت کا کوئی نمائندہ ان لواحقین یا مریضوں کی داد رسی کیلئے موجود نہیں ہے ، جبکہ عمران خان ڈینگی کے خاتمے کیلئے سردیوں کے انتظار میں ہیں ، انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ ڈینگی کے تدارک کیلئے تو کچھ نہ کر سکے اب عوام کیلئے قبرستان کی نشاندہی کی ہدایت کر دی گئی ہے ، انہوں نے کہا کہ وزیر صحت صرف بیانات تک محدود ہیں جبکہ عوام آئے روز جنازے اٹھا رہے ہیں،ا نہوں نے کہا کہ اے این 4پر ضمنی الیکشن میں اے این پی کی کامیابی یقینی ہے ،حالانکہ اس حلقے میں مرکزی و صوبائی حکومتیں باچا خان کے پیروکاروں کے مقابلے میں موجود ہیں،انہوں نے کہا کہ چار سال تک دونوں حکومتوں کی جانب سے این اے4کو نظر انداز کیا گیا اور پنجاب کی کرسی کیلئے رسہ کشی میں مصروف رہے لیکن اب وہاں سے مایوس ہونے والے عناصرنے ایک بارپھر ٹرانسفارمرز کی سیاست کرنے این اے4کا رخ کر لیا ہے ، میاں افتخار حسین نے کہا کہ پختون با شعور قوم ہے اور وہ اس بار جھوٹے وعدوں میں نہیں آئینگے۔