ملک کی سیاسی صورتحال گھمبیر ہے ،محاذآرائی ملک اور جمہوریت کیلئے زہر قاتل ہے،میاں افتخار حسین

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ حکومت سی پیک سمیت تمام اہم معاملات پر دوغلے پن ، ابہام اور لاتعلقی پر مبنی رویوں پر گامزن ہیں جبکہ اس کے سربراہ عمران خان کو تخت لاہور ، تخت اسلام آباد پر قبضے کی کوشش میں کسی بھی حد تک جانے کو تیار نظر آرہے ہیں ، ملک کی سیاسی صورتحال گھمبیر ہے ،محاذآرائی ملک اور جمہوریت کیلئے زہر قاتل ہے، تحریک انصاف اور اس کے اتحادیوں نے صوبے کو بنی گالہ اور اس کے مخصوص ٹولے کے رحم و کرم پر چھوڑ رکھا ہے اور اسی کا نیبجہ ہے کہ صوبے کے عوام نہ صرف حکومت سے بیزار اور مایوس ہو چکے ہیں بلکہ اب ان پر یہ بات بھی واضح ہو گئی ہے کہ صوبے اور عوام کے حقوق کا تحفظ صرف اے این پی ہی کر سکتی ہے۔۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی کے 12اکبر پورہ کنڈر میں شمولیتی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،اس موقع پر پی ٹی آئی اور دیگر جماعتوں سے درجنوں افراد نے اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا ، میاں افتخار حسین نے شامل ہونے والوں کو سرخ ٹوپیاں پہنائیں اور انہیں مبارکباد پیش کی، اُنہوں نے کہا کہ عوام تبدیلی کے نام و نہاد نعروں کی حقیقت جان چکے ہیں اور صوبے کے مفادات داؤ پر لگے ہوئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ اگلے انتخابات تبدیلی والوں کے عوامی احتساب کا عمل ثابت ہو گا اور اے این پی ایک بار پھر عوام کی بھر پور توجہ اور اعتماد کا مرکز بنی ہوئی ہے۔
اُنہوں نے کہا کہ دہشتگردی کا مسئلہ حکومتی دعوؤں کے برعکس حل نہیں ہو رہا اور اس کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ نیشنل ایکشن پلان پر پوری طرح عمل نہیں ہو رہا ۔ اُنہوں نے کہا کہ پنجاب بیسڈ دہشتگردوں پر ہاتھ نہ ڈالنے کے منفی اور خطر ناک نتائج برآمد ہو رہے ہیں جبکہ اب سرحدوں پر بھی جنگ اور بدترین کشیدگی کے بادل منڈلارہے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ ہمیں کسی تاخیر اور مصلحت کے بغیر خارجی اور داخلی پالیسیوں میں بنیادی تبدیلیاں لانی ہوں گی۔ سی پیک کے منصوبے میں پشتونوں اور بلوچوں کے حصے اور حق کے حصول کیلئے کسی قسم کی جدوجہد یا قربانی سے دریغ نہیں کیا جائیگا۔ پاکستان محض پنجاب کے مفادات کے تحفظ کا نام نہیں ہے بلکہ اس میں رہنے والی تمام قومیتوں کو ان کے جائز حقوق ملنے چاہئیں اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ اے این پی کا سی پیک پر مؤقف واضح ہے اور پختونوں کے حقوق پر سودے بازی کی کسی کو اجازت نہیں دی جائے گی، انہوں نے کہا کہ سی پیک پر صوبے کے تحفظات موجود ہیں،انہوں نے اپنے اس عزم کا اعادہ کیا کہ پختونوں کے حقوق کے حصول تک پر امن جدوجہد جاری رہے گی ، مردم شماری کے حوالے سے میاں افتخار حسین نے کہا کہ وفاقی حکومت دہشت گردی سے متاثرہ صوبے کا حق غصب کرنے میں مصروف ہے