عوامی نیشنل پارٹی بنوں کا سیاسی بنیادوں پر گرفتاریوں کے خلاف احتجاجی تحریک شروع کرنے کا فیصلہ
پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی بنوں نے تھانہ سٹی پولیس کی جانب سے کارکنوں کو ہراساں کرنے اور سیاسی بنیادوں پر گرفتاریوں کے خلاف احتجاجی تحریک شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے اے این پی اور ذیلی شاخوں کے کارکنوں کو بنوں پولیس کس بنیاد پر گرفتار کر رہی ہے کارکنوں کے خلاف انتقامی کاروائیوں کا سلسلہ بند کیا جائے، عوامی نیشنل پارٹی اے این پی بنوں کے ضلعی صدر حاجی عبدالصمد خان ،بنوں سٹی کے صدر ملک آصف خان ،پی ایس ایف کے ضلعی صدر حامد سورانی ،قیموس خان اور دیگر رہنماؤں نے ضلعی سیکرٹریٹ میں مشترکہ اجلاس سے خطاب میں کہا کہ بنوں پولیس اسٹیٹ بن چکا ہے اور آئے روز غیر قانونی اقدامات کا سلسلہ شروع ہے تھانہ سٹی سمیت مختلف تھانہ جات کی حدود میں کارکنوں پر پولیس کی جانب سے سیاسی بنیادوں پرچھاپے مارے جارہے ہیں جبکہ بغیر کسی جرم کے طلبہ اور کارکنان کو گرفتار کیا جا رہا ہے جو کہ غیر قانونی ہے، اے این پی نے ہمیشہ عدم تشدد کی سیاست کو فروغ دیا ہے مگر یہاں بنوں پولیس نے کارکنوں کی گرفتاریوں کا جو سلسلہ شروع کیا ہے اْن کے نتائج خطرناک ہوں گے، اْنہوں نے کہا کہ اے این پی نے اپنے دور حکومت میں سینکڑوں کارکنوں اور پارلیمانی اراکین کی جانوں کی قربانیاں دیکر امن کی بحالی میں کلیدی کردار ادا کیا لیکن آج پولیس نے سیاسی بنیادوں پر کارکنوں کے گھروں پر غیر قانونی چھاپوں کا سلسلہ شروع کیا ہوا ہے جو کہ انسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی ہے، اے این پی کے ضلعی قائدین نے آئی جی پولیس صلاح الدین محسود،ڈ ی آئی جی دار علی خٹک اور ڈی پی اوصادق بلوچ سے مطالبہ کیا ہے کہ اے این پی کے کارکنوں کے خلاف شروع کئے گئے کریک ڈاؤن کا سلسلہ ختم کیا جائے۔