کرسی اقتدار کی خاطر عمران خان کی پختون دشمنی کھل کر سامنے آ چکی ہے، حاجی غلام احمد بلور

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سینئر نائب صدر حاجی غلام احمد بلورنے کہا ہے کہ عمران خان وازرت عظمی تک پہنچنے کی خاطر پختونخوا اور پختون قوم کے ساتھ دشمنی میں اس حد تک آگے جا چکے ہیں کہ ان کے حقوق پاؤں تلے روندنے سے بھی دریغ نہیں کرتے اور ان کے بیانات سے پختونخوا اور پختون قوم کے ساتھ دشمنی کھل کر سامنے آ گئی ہے ، اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ بار ہا قبل از وقت انتخابات کا مطالبہ اس بات کا ثبوت ہے کہ نئی مردم شماری کے نتیجے میں ملنے والی5اضافی سیٹیں اور این ایف سی ایوارڈ میں ملنے والا حصہ کپتان کیلئے کوئی اہمیت نہیں رکھتا ، انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی چیئرمین کو صرف کرسی اقتدار سے غرض ہے جس کیلئے وہ کسی کے حقوق بھی غصب کرنے سے دریغ نہیں کرتے ، حاجی حلام احمد بلور نے اس بات پر انتہائی افسوس کا اظہار کیا کہ صرف ایک صوبے پختونخوا سے تحریک انصاف کو ووٹ ملا اور اسی صوبے اور عوام کے ساتھ دشمنی کی جا رہی ہے جبکہ ملک کے دیگر صوبوں نے ان پر عدم اعتماد کرتے ہوئے انہیں مسترد کر دیا تھا،انہوں نے کہا کہ پختون فیصلہ کریں کہ ان کے حقوق کا تحفظ کرنے والی جماعت کون سی ہے ، عوام نے جس جماعت کو ووٹ دیا وہی جماعت نئی مردم شماری کے نتیجے میں نوجوانوں کو ملنے والے ووٹ کے حق سے محروم رکھنا چاہتی ہے، انہوں نے کہا کہ اپنے اقتدار کیلئے صوبائی حقوق کو قربان کرنے والے کسی طور عوام کے خیر خواہ نہیں ہو سکتے ،انہوں نے قبل از وقت انتخابات کو صوبہ خیبر پختونخوا کے خلاف سازش قرار دیتے ہوئے کہا کہ واویلا کرنے والی پی ٹی آئی کی جماعت ایک جانب نئی حلقہ بندیوں کے تحت صوبے کو ملنے والی نئی 5اضافی نشستیں ضائع کرنا چاہتی ہے اور دوسری جانب صوبے کو این ایف سی ایوارڈ سے محروم رکھنا چاہتی ہے ، انہوں نے کہا کہ قبل از وقت الیکشن 98کی پوزیشن اور پرانی حلقہ بندیوں کے تحت ہونگے اور حالیہ مردام شماری کے نتیجے میں ظاہر کی جانے والی آبادی کو بھی باہر کر دیا جائے گا جبکہ نئی حلقہ بندیوں کے تحت بڑھنے والی 5سیٹوں سے بھی ہاتھ دھونا پڑیں گے ، انہوں نے کہا کہ صوبے کے حالیہ مالک اور حاکم وقت اپنے ہی صوبے کے خلاف سازشوں میں مصروف ہیں اور عمران خان وزارت عظمی تک جلد از جلد پہنچنے کی خواہش میں آئین تک کو روندنے پر تُلے ہوئے ہیں،حاجی غلام احمد بلور نے کہا کہ ملک کسی غیر یقینی صورتحال کا متحمل نہیں ہو سکتا ، جمہوریت کی بقاء کیلئے سب کو مدبرانہ سوچ اپنانا ہو گی ، انہوں نے کہا کہ اے این پی نے ہمیشہ جمہوریت کی بقا کیلئے قربانی دی ہے اور کبھی کسی غیر آئینی قوت کے سامنے سر نہیں جھکایا اور اب بھی ہم جمہوریت کے ساتھ ہیں جمہوریت ڈی ریل ہوئی تو ملک و قوم دونوں کو نقصان ہوگا، انہوں نے کہا کہ سیاستدان صورتحال کا ادراک کریں اور غیرضروری خواہشات کی تکمیل کیلئے آئین کو پاؤں تلے روندنے سے باز رہیں ۔