ٹرمپ کی غلط پالیسیوں نے مشرق وسطیٰ کا امن داؤ پر لگا دیا ہے، امیر حیدر خان ہوتی

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ اے این پی مظلوم فلسطینیوں کے ساتھ ہے اور امریکہ کے جارحانہ عزائم کی پرزور مذمت کرتی ہے ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی کے 23کسکورونہ مردان میں ایک شمولیتی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ، اس موقع پر مختلف سیاسی جماعتوں سے بیشتر افراد نے اے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا ، امیر حیدر خان ہوتی نے پارٹی میں شامل ہونے والوں کو سرخ ٹوپیاں پہنائیں اور انہیں مبارکباد پیش کی، اپنے خطاب میں امیر حیدر خان ہوتی نے امریکی صدر ٹرمپ کے حالیہ اعلان پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ بیت المقدس پر اسرائیلی قبضے کا اعلان جارحیت کی انتہا ہے اے این پی نے ہمیشہ دنیا بھر میں آزادی کی چلنے والی تحریکوں کی حمایت کی اور آج بھی کرتی ہے ، امریکی صدر کے اعلان سے مشرق وسظی پر جنگ کے بادل منڈلانے لگے ہیں ،انہوں نے کہا کہ بیت المقدس مسلمانوں کیلئے انتہائی اہمیت کا حامل ہے اور اسے اسرائیلی تسلط میں دینے کے خطرناک نتائج نکلیں گے ، انہوں نے کہا کہ امریکی صدر کا حالیہ اعلان مشرق وسطی سمیت عالم اسلام کیلئے خطرہ ہے۔ اگر بیت المقدس اور فلسطینیوں کی آزادی برقرار رہتی تو آج امریکہ اس قسم کے اعلان کی جرأت نہ کرتا ،انہوں نے کہا کہ جب اے این پی نے زور دیا کہ فلسظینیوں کی تحریک آزادی کی حمایت کرنی چاہئے اس وقت کسی نے ایک نہ سنی ،آج جس ظلم اور جارحیت کی انتہا کی گئی ہے اور اپنے ہی لوگوں کی غفلت کا نتیجہ ہے ، اگر اس وقت فلسظینیوں کا ساتھ دیا جاتا تو خطے میں اسرائیل کا اثرورسوخ قائم نہ ہو سکتا لیکن امریکہ اس کی بیک پر تھا، انہوں نے کہا کہ سب کو موجودہ نازک صورتحال کا ادراک کر کے اپنا کردار ادا کرنا چاہئے۔صوبے کی مجموعی صورتحال کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا کو معاشی طور پر دیوالیہ کر دیا گیا ہے اور ہم پر کرپشن کے الزام لگانے والوں کے اپنے ارکان اسمبلی وزیر اعلیٰ پر کرپشن کے الزامات لگا رہے ہیں ، انہوں نے کہا کہ ساڑھے چار سال تک پنجاب کی میٹرو کو جنگلہ بس کہنے والوں نے آخر کار اسی میٹرو کو سیاسی رشوت کیلئے استعمال کیا اور عوام کو ورغلانے کیلئے اس پر کام شروع کر دیا ، ، امیر حیدر خان نے کہا کہ قبل از وقت انتخابات کا مطالبہ صوبے کے خلاف سازش ہے اور عمران خان صوبے کو ملنے والی 5اضافی سیٹیں ضائع کرنے کے درپے ہیں ، انہوں نے کہا کہ ہم نے تحفظات کے باوجود خیبر پختونخوا میں پی ٹی آئی کا مینڈیٹ تسلیم کیا لہٰذا تمام منتخب حکومتوں کو اپنی معیاد پوری کرنی چاہئے اور الیکشن اپنے مقررہ وقت پر ہونے چاہئیں، اے این پی کے صوبائی صدر نے مزید کہاکہ صوبے میں پختون قوم 2018کے انتخابات میں سونامی نہیں بلکہ باچاخانی کو ووٹ دیں گے لوگوں نے ان کی تبدیلی کے جھوٹے دعوؤں اوروعدوں کا حشر دیکھ لیاہے اور ان کے کھوکھلے نعروں میں مزید نہیں آئیں گے .