مورخہ : 23.6.2016 بروز جمعرات

لیاقت ترکئی گوشوارے ، اے این پی رہنما بشریٰ گوہر کی پٹیشن پر سماعت آج بھی نہ ہو سکی۔
ممبران الیکشن کمیشن کی مدت ملازمت کے خاتمے کا علم ہونے کے باوجود نئی تقرریاں بروقت نہ کر نانااہلی کا ثبوت ہے۔
مقامی حکومتوں کے میئرز اور چیئرمین ضلع کونسل کے انتخابات بھی تعطل کا شکار ہیں۔

پشاور (پریس ریلیز) الیکشن کمیشن آف پاکستان میں سینیٹر لیاقت ترکئی کی طرف سے انتخابی گوشواروں میں آف شور کمپنیوں کو ظاہر نہ کرنے پر نا اہل قرار دینے کی سابق ممبر قومی اسمبلی عوامی نیشنل پارٹی کی رہنما بشریٰ گوہر کی پٹیشن پرسماعت آج بھی نہ ہوسکی اور اگلی تاریخ 18 جولائی مقرر کی گئی ہے۔ بشریٰ گوہر نے اپنے بیان میں الیکشن کمیشن کے مکمل نہ ہونے کو حکومت اور اپوزیشن دونوں کی نااہلی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ممبران الیکشن کمیشن کی مدت ملازمت کے خاتمے کا علم ہونے کے باوجود نئی تقرریاں بروقت نہ کر کے نااہلی کا ثبوت دیا گیا ہے۔ الیکشن کمیشن کا مکمل نہ ہونے سے اہم ترین انتخابی عذرداریاں زیر التواء ہیں اور مقامی حکومتوں کے میئرز اور چیئرمین ضلع کونسل کے انتخابات بھی تعطل کا شکار ہیں۔