مورخہ یکم جولائی 2016ء بروز جمعہ

دہشت گرد ی کے خاتمے کیلئے کالعدم تنظیموں کے خلاف بلا امتیاز کاروائی کا آغاز کیا جائے ،سردار حسین بابک
حکومت اپنی ذمہ داریوں سے غافل ہے، صوبے کے طول عرض میں روزانہ لوگوں کو ٹارگٹ کیا جا رہا ہے
آپریشن ضرب عضب کے نتیجے میں قائم عارضی امن سے حکومت کو فائدہ اٹھانا چاہئے تھا
دائمی امن کے قیام کیلئے نیشنل ایکشن پلان کے تمام 20نکات پر عملدرآمد میں تاخیر سے دہشت گرد دوبارہ منظم ہوئے

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری اور صوبائی اسمبلی میں پارٹی کے پارلیمانی لیڈر سردارحسین بابک نے کہاہے کہ دہشت گردی کے ناسور کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے اور نئی نسل کو پر امن معاشرہ منتقل کرنے کیلئے تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں کو مصلحت سے کام لینے کی بجائے میدان میں نکلنا ہو گا،پشاور بشیر آبادمیں ٹارگٹد بم دھماکے کے نتیجے میں پولیس اہلکار کی شہادت اور ڈیرہ سمیت صوبے کے بیشتر اضلاع میں ٹارگٹ کلنگ کے بڑھتے ہوئے واقعات پر دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ صوبے کے طول عرض میں روزانہ کی بنیاد پر تمام مکتبہ فکر سے تعلق رکھنے والے افراد کو ٹارگٹ کیا جا رہا ہے اور محکمہ داخلہ کے اعداد و شمار کے مطابق ان واقعات میں خطر ناک حد تک اب اضافہ ہو چکا ہے، انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کے خلاف آپریشن ضرب عضب جس انداز میں شروع کیا گیا اس سے دہشتگردوں کا نیٹ ورک یا تو ختم ہو گیا یا ان میں کافی حد تک کمی واقع ہوئی تاہم صوبائی حکومت کو اس عارضی امن سے فائدہ اٹھانا چاہئے تھا جبکہ حکمران اس نازک صورتحال میں تماشائی بنے بیٹھے ہیں اور دہشت گرد جب چاہیں جسے اور جہاں چاہیں قتل کر کے آسانی سے فرار ہو جاتے ہیں، سردار بابک نے کہا کہ صوبائی حکومت اپنی ذمہ داریوں سے غافل ہے اس لئے وہ ان واقعات کی مذمت تک نہیں کرتے انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کیلئے یہ مسئلہ شاید کوئی مسئلہ ہی نہیں کیونکہ ان کے اپنے جو ممبران اسمبلی قتل ہوئے ا ن کے لواحقین آج تک اپنے حق اور شہداے پیکج کیلئے در در ٹھوکریں کھا رہے ہیں، صوبائی جنرل سیکرٹری نے کہا کہ دائمی امن کے قیام کیلئے نیشنل ایکشن پلان کے تمام 20نکات پر عمل میں تاخیر کے باعث دہشت گرد دوبارہ منظم ہوئے، سردار حسین بابک نے کہا کہ دہشت گرد ی کے خاتمے کیلئے فاٹا اور خیبر پختونخوا سمیت ملک بھر میں کالعدم تنظیموں کے خلاف بلا امتیاز کاروائی کا آغاز کیا جائے ورنہ دائمی امن کا خواب کبھی شرمندہ تعبیر نہیں ہو گا،سردار حسین بابک نے مختلف واقعات میں شہید ہونے والے افراد کی مغفرت اور غمزدہ خاندانوں کے صبر جمیل کیلئے دعا کی۔