کالا باغ ڈیم کا منصوبہ مردہ گھوڑا ہے اس میں جان ڈالنے کی کوشش نہ کی جائے ۔ صدر اے این پی سندھ
کراچی۔24 فروری 2016،
عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے صدر سینیٹر شاہی سید نے کہاہے کہ کالا باغ ڈیم کا منصوبہ مردہ گھوڑا ہے اس میں جان ڈالنے کی کوشش نہ کی جائے کالا باغ ڈیم کے خلاف تین صوبوں کی اسمبلیوں کی متفقہ قرار داریں موجود ہیں تخت لاہور ہوش کے ناخن لے اتنا طویل عرصہ گزرنے کے باوجود مسلم لیگی رہنماء اب بھی اپنے ماضی سے سبق سیکھنے کو تیار نہیں پنجاب حکومت کے ترجمان کا بیان تین صوبائیاسمبلیوں کی قراردادوں کی توہین کے مترادف ہے غیر جمہوری رویوں کی وجہ سے ملک دو لخت ہوچکا ہے تخت لاہور تاریخ سے کچھ سیکھنے کو تیار نہیں ہے ملک خاص طور پر خیبر پختون خوا میں آبی ذخائر اوربجلی کی پیداوار کہیں بہتر منصوبے موجود ہیں پتہ نہیں کیوں زعیم قادری کی جماعت کو ملک میں پانی کی قلت اور توانائی کے بحران کا حل صرف کالا باغ ڈیم میں ہی کیوں نظر آتا ہے پنجاب حکومت کے ترجمان تین صوبائی اسمبلیوں کی قرار دادوں کی اہمیت سمجھنے سے قاصر ہیں ایسا محسوس ہوتا ہے کہ مسلم لیگ (ن) ابھی تک آمریت سائے سے باہر نہیں نکلی ہے باچا خان مرکز سے جاری کردہ بیان میں اے این پی سندھ کے صدر اور پختو ن ایکشن کمیٹی (لویہ جرگہ) کے چیئر مین سینیٹر شاہی سید نے مذید کہا ہے کہ کالا باغ ڈیم کا منصوبہ خیبر پختون خوا کو ڈبونے اور سندھ کو بنجر کرنے کا منصوبہ ہے سندھ اور خیبر پختون خوا کی صوبائی اسمبلیاں کالاباغ ڈیم کے خلاف کئی مرتبہ متفقہ قرار دادیں منظور کر چکی ہیں چھوٹے صوبوں کی آواز دبانے اور زبردستی فیصلے مسلط کرنے کے رویوں سے اجتناب کیا جائے ملک کو پہلے ہی کئی سنگین بحرانوں کا سامنا ہے اس طرح کی بیان بازی اجتناب کیا جائے جس سے قومی اتحاد کو نقصان پہنچے