صوبائی حکمرانوں کو صوبے کی مشکلات ، ترجیحات اور چیلینجز کا ادراک نہیں ہے ’ میاں افتخار حسین

مورخہ4.1.2016 بروز پیر صوبائی حکمرانوں کو صوبے کی مشکلات ، ترجیحات اور چیلینجز کا ادراک نہیں ہے ’ میاں افتخار حسین‘ اے این پی نے پیچیدہ حالات کے باوجود صوبے کی ترقی اور خدمت کو سرفہرست رکھا۔ کاریڈور کے ایشو پر اگر ابتداء میں ہمارے مؤقف کی تائید کی جاتی تو صورتحال...

چائنا پاک اکنامک کاریڈور کا معاملات دیکھنے کیلئے اے این پی کی سات رکنی کمیٹی کا قیام

مورخہ4.1.2016 بروز پیر چائنا پاک اکنامک کاریڈور کا معاملات دیکھنے کیلئے اے این پی کی سات رکنی کمیٹی کا قیام افراسیاب خٹک کمیٹی کے سربراہ ہوں گے ، دیگر ارکان میں میاں افتخار حسین ، امیر حیدر خان ہوتی ، بشریٰ گوہر ، زاہد خان، داؤد خان اور خوشحال خٹک شامل۔ پشاور ( پریس...

تعلیم کے بغیر امن اور ترقی کا تصور ممکن نہیں ہے، سردارحسین بابک

مورخہ4.1.2016 بروز پیر * معیاری تعلیم کی فراہمی کیلئے باچا خان ایجوکیشنل فاؤنڈیشن کا کردار اور خدمات قابل تقلید ہیں ’ سردار حسین بابک ‘ * فاؤنڈیشن چھ ہزار سے زائد طلباء اور طالبات کو مفت تعلیم فراہم کر رہی ہے اس ادارے کی حوصلہ افزائی کی ضرورت ہے۔ * تعلیم کے بغیر امن...

کاریڈور، نیشنل ایکشن پلان اور خارجہ پالیسی پر اے این پی کا مؤقف جرأت مندانہ اور زمینی حقائق پر مبنی رہا ، زاہد خان

مورخہ 3 جنوری 2016ء بروز اتوار کاریڈور، نیشنل ایکشن پلان اور خارجہ پالیسی پر اے این پی کا مؤقف جرأت مندانہ اور زمینی حقائق پر مبنی رہا ، زاہد خان ہم نے پاک چائنہ اکنامک کوریڈور پر مؤثر آواز اٹھائی تو ہمیں غدار کہا گیا اور ہمارے خلاف منفی پراپیگنڈا مہم چلائی گئی *اہم...