مورخہ 11مارچ 2016ء بروز جمعہ
کینٹ میں تاجروں پر ظالمانہ ٹیکس کا فیصلہ واپس لیا جائے۔ ہارون بشیر بلور
صوبے میں کاروبار کی صورتحال دہشت گردی کے باعث مخدوش ہے،
سائن بورڈز اور جنریٹرز پر ٹیکس تاجر برادی سے جینے کا حق چھیننے کی کوشش ہے

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی ترجمان ہارون بشیر بلور نے کینٹ ایریا میں دکانوں کے سائن بورڈز اور جنریٹرز پر خود ساختہ ٹیکس کے فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے اسے فوری طور پر واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے ، اے این پی سیکرٹریٹ سے جاری بیان میں انہوں نے کہا کہ صوبے میں کاروبار کی صورتحال دہشت گردی کے باعث مخدوش ہے اور اُ س پرکنٹونمنٹ بورڈ انتظامیہ نت نئے ٹیکس لگا کر تاجر برادی کو مزید پریشان کرنے پر تُلی ہوئی ہے جو کسی طور مناسب نہیں ہے، انہوں نے کہا کہ سائن بورڈز اور دکانوں پر لگے جنریٹرز پر سالانہ لاکھوں روپے ٹیکس لگا کر تاجر برادی سے جینے کا حق چھیننے کی کوشش کی جا رہی ہے جبکہ صوبے کی معاشی صورتحال دگرگوں ہے اور عوام گھروں سے باہر نکلنے میں خوف محسوس کرتے ہیں ، انہوں نے کہا کہ انتظامیہ نے پہلے کینٹ ایریا میں پراپرٹی ٹیکس کا ڈھونگ رچایا اور جب وہ معاملہ عدالت پہنچا تو اب تاجروں کو سائن بورڈ اور جنریٹر ٹیکس کے نام پر پریشان کیا جا رہا ہے،ہارون بشیر بلور نے کہا کہصوبائی حکومت کو اس تمام صورتحال کا فوری طور پر نو ٹس لینا چاہئے تا کہ تاجروں میں پائی جانے والی بے چینی کا تدارک کیا جا سکے ، انہوں نے کنٹونمنٹ بورڈ انتظا میہ سے بھی مطالبہ کیا کہ تاجروں پر خود ساختہ ٹیکس کے اطلاق کا فیصلہ واپس لیا جائے ۔