مورخہ : 12.4.2016 بروز منگل

کسٹم ایکٹ کے خلاف ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کی کامیاب ہڑتال قابل ستائش ہے۔ سردار حسین بابک
حکومتوں میں ہوتے ہوئے بعض پارٹیاں اپنی بے بسی پر مگر مچھ کے آنسو بہا رہی ہیں۔
کسٹم ایکٹ کی واپسی تک احتجاج جاری رہے گا۔
احتجاج کو یوسی اور گاؤں کی سطح تک وسعت دی جائے گی۔

پشاور ( پریس ریلیز) کسٹم ایکٹ کے خلاف ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کی کامیاب ہڑتال قابل ستائش ہے۔ اے این پی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے ملاکنڈ ڈویژن کے تمام عوام کومکمل شٹر ڈاؤن اور ہڑتال پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ اے این پی کسٹم ایکٹ کے خلاف جاری احتجاجی تحریک کو کامیاب بنانے کیلئے منظم اور موثر انداز میں ملاکنڈ ڈویژن اور کوہستان کے عوام کے شانہ بشبانہ کھڑی رہے گی۔ اُنہوں نے کہا کہ مرکزی اور صوبائی حکومت کے اس ظالمانہ اقدام نے ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کو متحد کر دیا ہے جو کہ ہمارے موقف کی جیت ہے۔
اُنہوں نے کہا کہ اے این پی نے پہلے سے اعلان کر رکھا ہے کہ کسٹم ایکٹ کی واپسی تک احتجاج جاری رہے گا۔ اُنہوں نے ملاکنڈ ڈویژن کے تمام عوام اور ہر مکتبہ فکر کے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ کسٹم ایکٹ کے خلاف احتجاجوں کو علاقوں اور یو سی تک وسعت دیں تاکہ مرکزی اور صوبائی حکومتیں اس ظالمانہ فیصلے کی واپسی پر مجبور ہو جائیں۔ اُنہوں نے کہا کہ حکومتی پارٹیوں کے ارکان اسمبلی ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کے اتحاد میں رختے ڈالنے سے گریز کریں۔ اُنہوں نے جماعت اسلامی کی اشتہار بازی پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملاکنڈ ڈویژن کے عوام جان چکے ہیں کہ حکومتوں میں رہتے ہوئے بعض پارٹیاں کتنی بے بس اور مگر مچھ کے آنسو بہا رہی ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کے اس عوامی مسئلے میں عوام کو بے وقوف بنانے اور اتحاد میں رکاوٹ بننے والی ہر قوت کا مقابلہ کیا جائیگا اور حکومتوں کو عوامی دباؤ اور احتجاج کے ذریعے مجبور کیا جائیگا کہ وہ اس ظالمانہ اقدام اور فیصلے کو واپس لیں۔ اُنہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کی دوغلی پالیسی کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔ سردار حسین بابک نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کے اتحاداور یکجہتی کی ایک تاریخ ہے ۔ اُنہوں نے توقع ظاہر کی ہے کہ اتحاد و اتفاق کی اس فضا کو برقرار رکھنے کیلئے سنجیدہ کوششیں برقرار رکھی جائیں گی۔