مورخہ : 26.3.2016 بروز ہفتہ

پی ٹی آئی حکومت کی اُلٹی گنتی شروع ہو چکی ہے۔ 2018 کے الیکشن میں ان کو اپنے قد کاٹھ کا اندازہ ہو جائیگا۔ حیدر خان ہوتی
سن2018 میں صوبے کے تمام اختیارات بنی گالہ سے واپس لیکر دم لیں گے۔ عمران خان پنجاب کی سیاست کر رہے ہیں۔
نواز شریف اپنی کرسی بچانے کی فکر میں لگے ہوئے ہیں ۔ مردان میں شمولیتی اجتماع سے خطاب

پشاور( پریس ریلیز ) سابق وزیراعلیٰ اور اے این پی کے صوبائی صدر امیرحیدرخان ہوتی ایم این اے نے کہاہے کہ پی ٹی آئی حکومت کی الٹی گنتی شروع ہوچکی ہے ،2018کے انتخابات میں تبدیلی والوں کو اپنے قد کاٹھ کا اندازہ ہوجائے گا۔ اے این پی پختون قوم کے حقو ق تسلیم نہ کرنے والی سیاسی جماعتوں کو سرے سے ماننے کوتیار نہیں ،پنجاب کے اورنج اورمیٹرو ٹرین سے خیبرپختون خوا کے غریب بچوں کو کوئی فائدہ نہیں ،مسائل اور مصائب سے نکلنے کے لئے پختونوں میں قوم پرستی کا جذبہ بیدار کرناہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ کی شام مردان کے حلقہ پی کے 25کے علاقہ طاؤس بابینی میں ایک شمولیتی اجتماع سے خطاب کے موقع پر کیا۔ اے این پی ضلع مردان کے صدر اورڈسٹرکٹ ناظم حمایت اللہ مایار اورجنرل سیکرٹری حاجی لطیف الرحمان نے بھی خطاب کیا جبکہ رکن صوبائی اسمبلی احمد بہارد خان ،پارٹی کے صوبائی نائب صدر جاوید یوسفزئی ، سابق ناظم عبدالعزیز خان بھی اس موقع پر موجود تھے۔ جلسے میں ویلج کونسل الہ دادخیل ٹو کے ناظم ملتان خان ،بخت تاج خان ،ظاہر خان ،نورنبی اور سجید گل نے سینکڑوں ساتھیوں سمیت تحریک انصاف اورمسلم لیگ سے مستعفی ہوکراے این پی میں شمولیت کا اعلان کیا۔ امیرحیدرخان ہوتی نے انہیں پارٹیاں ٹوپیاں پہنائیں اورانہیں مبارک باددی۔ اے این پی کے صوبائی صدر نے کہاکہ پختون قوم بیدارہوچکی ہے اور تحریک انصاف اب انہیں محض دعوؤں اور وعدوں سے دھوکہ نہیں دے سکتی پختون قوم کے باہمی اتفاق اور اتحاد کے لئے جو جدوجہد باچاخان اور رہبرتحریک خان عبدالولی خان نے شروع کی تھی اب وہ تحریک رنگ لے آئی ہے اوراس سفر میں مشران اوربزرگوں کے ساتھ ساتھ نوجوان بھی ہمارے شانہ بشانہ شامل ہوچکے ہیں ۔ امیرحیدرخان ہوتی نے تحریک انصاف کے سربراہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ پختون نوجوان اب سونامی کے ساتھ نہیں بلکہ سرخ نامی کے ساتھ ہیں عمران خان نوجوانوں کا اعتماد کھوچکے ہیں۔ امیرحیدرخان ہوتی نے کہاکہ بلدیاتی انتخابات میں دواضلا ع واپس لئے گئے ہیں 2018میں تمام صوبے کے اختیارات بنی گالہ سے واپس لے کر دم لیں گے۔ انہوں نے کہاکہ آئندہ انتخابات میں خیبرپختون خوا وزیراعظم کے انتخاب میں اہم اوربنیادی کردارہوگا انہوں نے کہاکہ اے این پی کے دور حکومت میں ہرطرف ترقی کا دوردورہ تھا تبدیلی والوں کے دور میں ترقی کا پہیہ رک گیاہے موجودہ دور میں کوئی نیا منصوبہ شروع نہیں کیاگیا۔ انہوں نے کہاکہ عمران خان وزیراعظم بننے کے لئے پنجاب کی سیاست کررہے ہیں جبکہ میاں نوازشریف اپنی کرسی بچانے میں لگے ہوئے ہیں دونوں کو پختون قوم کے مسائل سے کوئی سروکار نہیں میاں نوازشریف کی تمام ترتوجہ پنجاب پر مرکوز ہے اور نج اور میٹرو بس منصوبوں سے خیبرپختون خوا کے غریب بچوں کے لئے کوئی خیر نہیں۔ انہوں نے کہاکہ مردان کا ڈسٹرکٹ ہسپتال ،چلڈرن ہسپتال اور باچاخان میڈیکل کالج کے تعمیراتی منصوبے جو گذشتہ سال مکمل ہونے تھے کو ادھورا رکھ اس کے فنڈز کو روک دیاگیا۔ امیرحیدرخان ہوتی نے عوامی نیشنل پارٹی اقتدار میں آکر دوبارہ ترقیاتی عمل شروع کیاجائے گا ۔