مورخہ 21فروری 2016ء بروز اتوار

پنجاب میں پختون طلباء پر تشدد کی تحقیقات کرائی جائیں، ہارون بشیر بلور
پڑھا لکھا طبقہ بھی متعصبانہ رویہ پر عمل پیرا ہے اور پختون طلباء پر تعلیم کے دروازے بند کرنے کی پالیسی پر عمل پیرا ہے
ایک مذہبی جماعت کے طلباء اور کالج انتظامیہ پختون طلباء کو ہراساں کر رہے ہیں، پنجاب حکومت واقعے کا نوٹس لے۔

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی ترجمان ہارون بشیر بلور نے پنجاب میں کرکٹ میچ کے دوران دو طلباء تنظیموں کے درمیان جھگڑے میں پختون طلباء پر تشدد کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے اور واقعے کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے ، اے این پی سیکرٹریٹ سے جاری بیان میں ہارون بشیر بلور نے کہا کہ پنجاب کا پڑھا لکھا طبقہ بھی متعصبانہ رویہ پر عمل پیرا ہے اور پختون طلباء کو ذہنی اذیت سے دوچار کر کے ان پر تعلیم کے دروازے بند کرنے کی پالیسی پر عمل پیرا ہے، انہوں نے کہا کہ اتنا کچھ ہونے کے باوجود اب بھی ایک مذہبی جماعت کے طلباء اور کالج انتظامیہ پختون طلباء کو ہراساں کر رہے ہیں اور اپنے متعصبانہ روئیے سے انہیں احساس کمتری میں مبتلا کرنے کی ناکام کوشش کر رہے ہیں ، انہوں نے کہا کہ پختون اپنی مہمان نوازی کے باعث دنیا کی پہلی قوم ہے اور پختونوں نے خیبر پختونخوا میں زیر تعلیم پنجاب کے طلباء کے حوالے سے کبھی اس قسم کا رویہ نہیں اپنایا جو اس وقت پنجاب میں پختون طلباء کے ساتھ روا رکھا گیا ہے ، انہوں نے پنجاب حکومت سے مطالبہ کیا کہ اس واقعے کی تحقیقات کرائی جائیں تا کہ پختون طلباء بھی باقی تمام طلباء کی طرح اپنی تعلیمی سرگرمیاں بلا خوف و خطر جاری رکھ سکیں۔