سندھ حکومت کی کارکردگی خود اس کے لیے سب بڑا خطرہ ہے مینڈیٹ کا احترام اپنی جگہ مگر حق حکمرانی کی ادائیگی بھی ضروری ہے ۔
پاکستان کی معاشی شہ رگ کہلوانے والا شہر انتہائی توجہ اور بہتر طرزحکمرانی کا مستحق ہے۔
منصوبوں کی دگنی لاگت ،طویل مدت میں تکمیل اور ناقص تعمیر سے صوبائی حکومت کو ہر طرف سے سخت تنقید کا سامنا ہے۔
اب بھی وقت ہے صوبائی حکومت اپنے طرزعمل پر نظر ثانی کرے ۔
صرف بیانات اور اعلانات کے بجائے روشنیوں کے شہر کے باسیوں کے مشکلات کی کمی کے پروجیکٹس کی شروعات اور تکمیل ہوتی ہوئی نظر آنی چاہتے ہیں۔ترجمان اے این پی سندھ
کراچی۔بدھ 10 فروری 2016،
عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے ترجمان نے کہا ہے کہ نیشنل ہائی وے پر ملیر 15 سے گزرنے والے پہلے مسلسل کئی برسوں سے دھول مٹی کا مزہ چکھ رہے تھے اب ملیر 15 کے ادھورے پل کا افتتاح کرکے شہریوں کی آنکھوں میں دھول جھونکی گئی چند ماہ کے منصوبے کو دو برس سے زائد کا عرصہ گزر چکا ہے ڈبل لاگت اور طویل مدت کا یہ منصوبہ صوبائی حکومت کی کارکردگی کا منہ بولتا ثبوت ہے گزشتہ سال اگست کے مہینے میں افتتاح کیے گئے ملیر ہالٹ پل کی نیچے کی سڑک کی تعمیر اب تک مکمل نہیں کی جاسکی ہے ناقص کارکردگی اور شہر کے مسائل سے عدم دلچسپی سے الزامات لگانے والے اور تنقید کرنے والوں کا کام انتہائی آسان ہوجاتا ہے زبانی جمع خرچ سے عوام کو زیادہ دیر مطمئن نہیں کیا جاسکتا کاغذی منصوبوں سے فائلوں کا پیٹ تو بھرا جاسکتا ہے مگر کے مسائل حل نہیں ہوسکتے ،باچا خان مرکز سے جاری کردہ بیان میں اے این پی سندھ کے ترجمان نے مذید کہا ہے کہ سندھ حکومت کی کارکردگی اس کے لیے سب بڑا خطرہ ہے جمہوریت عام آدمی کی حکمرانی اور مسائل کے حل کا نام ہے مینڈیٹ کا احترام اپنی جگہ مگر حق حکمرانی کی ادائیگی بھی ضروری ہے پاکستان کی معاشی شہ رگ کہلوانے والا شہر انتہائی توجہ اور بہتر طرزحکمرانی کا مستحق ہے منصوبوں کی دگنی لاگت ،طویل مدت میں تکمیل اور ناقص تعمیر سے صوبائی حکومت کو ہر طرف سے سخت تنقید کا سامنا ہے اب بھی وقت ہے صوبائی حکومت اپنے طرزعمل پر نظر ثانی کرے،صرف بیانات اور اعلانات کے بجائے روشنیوں کے شہر کے باسیوں کے مشکلات کی کمی کے پروجیکٹس کی شروعات اور تکمیل ہوتی ہوئی نظر آنی چاہتے ہیں۔