2016 وزیر اعظم نواز شریف کا اے این پی کے سربراہ اسفندیار ولی خان کو ٹیلی فون ،تفصیلی تبادلہ خیال

وزیر اعظم نواز شریف کا اے این پی کے سربراہ اسفندیار ولی خان کو ٹیلی فون ،تفصیلی تبادلہ خیال

وزیر اعظم نواز شریف کا اے این پی کے سربراہ اسفندیار ولی خان کو ٹیلی فون ،تفصیلی تبادلہ خیال

Mashar copy

مورخہ 20جنوری 2016ء بروز بدھ

 وزیر اعظم نواز شریف کا اے این پی کے سربراہ اسفندیار ولی خان کو ٹیلی فون ،تفصیلی تبادلہ خیال
اے این پی کے سربراہ کا دوران بات چیت نیشنل ایکشن پلان پر عدم اعتماد کا اظہار
اسفندیار ولی خان کا موجودہ صورتحال پر خصوصی اجلاس یا اے پی سی بلانے کا مطالبہ

پشاور ( پ ر ) وزیر اعظم محمد نواز شریف نے بدھ کی دوپہر بیرون ملک سے عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفندیار ولی خان سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا اور ان سے باچا خان یونیورسٹی پر ہونے والے حملے پر اظہار افسوس کیا ، انہوں نے کہا کہ وہ دکھ کی اس گھڑی میں چارسدہ کے عوام ، متاثرہ خاندانوں اور اے این پی کے غم میں برابر کے شریک ہیں
اے این پی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات زاہد خان کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق اسفندیار ولی خان نے وزیر اعظم کے ساتھ اپنی بات چیت کے دوران سانحہ چارسدہ پر انتہائی تشویش اور دکھ کا اظہار کیا اور ان سے مطالبہ کیا کہ وہ نیشنل ایکشن پلان اور موجودہ صورتحال اور مستقبل کے ممکنہ چیلنجز پر وطن واپسی کے فوراً بعد ایک خصوصی اجلاس یا اے پی سی طلب کریں جس کے دوران سیاسی قیادت اور قوم کو ریاستی اقدامات اور نیشنل ایکشن پلان کی تفصیلات سے آگاہ کیا جائے ،اسفندیار ولی خان نے دوران بات چیت وزیر اعظم کو اپنے بعض خدشات سے آگاہ کرتے ہوئے مؤقف اپنایا کہ صورتحال کی سنگینی کا احساس کرتے ہوئے سیاسی قیادت اور عوام کو بتایا جائے کہ ریاستی ادارے کیا کرنے جا رہے ہیں اور ان کا مستقبل کا لائحہ عمل کیا ہے ،
اسفندیار ولی خان نے دوران گفتگو نیشنل ایکشن پلان پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے وزیر اعظم کو اپنے خدشات سے آگاہ کیا اور ان پر واضح کیا کہ اے این پی اور صوبے کے عوام اپنی سلامتی اور مستقبل کے بارے میں بدترین تشویش مین مبتلا ہے اس لئے اس کا ازالہ کیا جائے اور نئی صف بندی کو یقینی بنایا جائے ،
وزیر اعظم نواز شریف نے اے این پی کے سربراہ کو یقین دلایا کہ وہ ان کے خدشات اور تجاویز کی روشنی میں ہر ممکنہ اور درکار اقدام اٹھائیں گے۔

شیئر کریں