2016 وزیرستان کے متاثرین اور عوام کے مفادات کا تحفظ کرتے ہوئے ان کی بحالی کو یقینی بنایا جائے، سردار حسین بابک

وزیرستان کے متاثرین اور عوام کے مفادات کا تحفظ کرتے ہوئے ان کی بحالی کو یقینی بنایا جائے، سردار حسین بابک

وزیرستان کے متاثرین اور عوام کے مفادات کا تحفظ کرتے ہوئے ان کی بحالی کو یقینی بنایا جائے، سردار حسین بابک

12471733_984536058274741_5830739613825491980_o

مورخہ : 7.1.2016 بروز جمعرات
وزیرستان کے متاثرین اور عوام کے مفادات کا تحفظ کرتے ہوئے ان کی بحالی کو یقینی بنایا جائے ‘ سردار حسین بابک
اپریشن کے نتیجے میں قبائلی عوام کے کاروبار اور مکانات تباہ ہو گئے ہیں۔
بحالی کی کوششیں تیز نہیں کی گئیں تو اس سے آپریشن کے نتائج پر منفی اثرات مرتب ہوں گے۔
پشاور ( پریس ریلیز) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری اور پارلیمانی لیڈر سردارحسین بابک نے کہاہے کہ فوجی اپریشن کے ساتھ ساتھ فاٹا متاثرین کی بحالی کو اولین ترجیح دی جائے حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ متاثرین سے کیے گئے اپنے وعدوں کو ایفا کر کے ان کی مکمل بحالی کو یقینی بنائے، فاٹا سیاسی اتحاد کی جانب سے فاٹا کو خیبرپختون خوا میں ضم کرنے کے مطالبے کی اے این پی بھرپور حمایت کرتی ہےِ،اے این پی سیکرٹریٹ سے جاری کردہ اپنے بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ پولیٹیکل ایجنٹس کے ذریعے فاٹا سیاسی اتحاد کی تحریک کو ناکام بنانے کی جو مذموم کوشیش ہورہی ہیں، ہم اس کی بھرپور مذمت کرتے ہیں،شمالی وزیرستان کے تباہ حال انفراسٹرکچرکی بحالی کے لیے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھائے جائیں،صوبائی وزیراعلیٰ نے متاثرین کے لیے جو تین ہزار روپے ماہانہ کرایہ مکان کا اعلان کیا تھا اس سے تاحال متاثرین محروم چلے آرہے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ اپریشن ضرب عضب کے نتیجے میں متاثرین کا نہ صرف کاروبار بلکہ ان کے مکانات بھی مکمل تباہ ہوئے ہیں,اور ان کے گھروں کا سازوسامان بازاروں میں کھلے عام نیلام ہورہاہے،ہزاروں سکولز کھنڈرات میں بدل گئے ہیں،انہوں نے مطالبہ کیا کہ فاٹا میں یونیورسٹی بنانے کا جو اعلان کیاگیاہے اسے بھی عملی جامہ پہنایاجائے،قبائلی عوام کو پاکستانی شہریوں جیسے یکساں حقوق دیے جائیں،اور ملک کے تمام تعلیمی اداروں میں ان کے لیے کوٹہ مختص اور یقینی بنایاجائے، شمالی وزیرستان کے متاثرین کے لیے ماہانہ تین ہزار روپے کے حساب سے اب تک نہ ملنے والی پانچ ارب پچیس کروڑ تیس لاکھ کی ادائیگی فوری کی جائے،اے این پی پارلیمینٹ کے اندر اور باہر متاثرین کی مکمل بحالی کے لیے ہر قسم اقدامات اٹھانے سے دریغ نہیں کرے گی۔ اُنہوں نے کہا کہ اگر حکومت نے متاثرین کی فوری واپسی کو یقینی بناتے ہوئے ان کے نقصانات کے ازالے کیلئے اقدامات کرے اور بحالی کی کوششوں کی رفتار تیز کرتے ہوئے عوام میں پائی جانے والی بے چینی کا ازالہ کرے ورنہ دوسری صورت میں فوجی اپریشن کے نتائج پر انتہائی منفی اثرات مرتب ہوں گے۔

شیئر کریں