مورخہ : 8.3.2016 بروز منگل

واقعہ شبقدر سے لگتاہے کہ دہشت گردوں پہلے سے زیادہ مضبوط ہورہے ہیں۔
پختونوں کی نئی نسل اب اپنے دوست دشمن کو اچھی طرح پہچان چکی ہے،سنگین خان ایڈووکیٹ

پشاور(پ،ر) نیشنل یوتھ آرگنائزیشن کے صوبائی صدر سنگین خان ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ واقعہ شبقدر سے واضح ہوگیا ہے کہ دہشت گرد پہلے سے زیادہ مضبوط ہورہے ہیں،صوبے میں پے درپے دہشت گردی کے واقعات کے باوجود قومی ایکشن پلان پر عمل درآمد کی رفتار سست روی کا شکار ہے،جس سے دہشت گردوں اور ان کے سہولت کارفائدہ اٹھارہے ہیں،ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیشنل یوتھآرگنائزیشن یوسی ہزارخوانی میں ضلعی کنونشن کے سلسلے میں منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اجلاس کی صدارت اعظم خان نے کی اس موقع پر سنگین خان نے کہا کہ ضلعی یوتھ کنونشن سے مخالفین کی آنکھیں کھل جائیں گی،انہوں نے کہا پختونوں کی نئی نسل اب اپنے دوست دشمن کو اچھی طرح پہچان چکی ہے اور وہ دن دور نہیں کہ صوبے میں اے این پی سب سے بڑی قوت کے طور پر سامنے آجائے گی،اس موقع پراے این پی یونین کونسل ہزارخوانی کے صدر فرہادخان نیشنل یوتھ کے صدر اعظم خان،جنرل سیکرٹری رحمان اللہ نے بھی خطاب کیا،مقررین نے کہا کہ چائناپاک اقتصادی راہداری میں صوبے کے حقوق پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیاجائے گا ،انہوں نے کہا کہ جن باتوں پر ہمارے قائدین پر الزامات لگائے جاتے تھے آج وہ باتیں تمام سیاسی جماعتوں کے قائدین کی زبانوں پر ہیں،انہوں نے کہا کہ آنے والا وقت پختون نیشنل ازم کا ہے اور اے این پی پختونوں کے حقوق کی واحدترجمان اور ضامن جماعت ہے ۔