مورخہ 4 مئی2016ء بروز بدھ

نوازشریف اور عمران خان کو پختونوں کے حقوق سے کوئی سروکار نہیں، آنے والا دور اے این پی کا ہے۔حیدر خان ہوتی
حکومت بدترین مالی و انتظامی بحران کا شکار ہے اور بوکھلاہٹ کے اس عالم میں عوامی مسائل کو پس پشت ڈال دیا ہے۔
صوبے میں خوشحالی اور ترقی کا بے مثال دور کا آغاز اے این پی کی مرہون منت ہے
حکومت کی کرپشن کے بڑے پیمانے پر سکینڈلز منظر عام پر آ رہے ہیں جس کی وجہ سے احتسابی اداروں پر وار کیا جا رہا ہے۔
عوام اپنے ساتھ ہونے والی ناانصافیوں کا بدلہ چکادیں گے ۔ پی کے 31 صوابی میں ورکرز کنونشن سے خطاب

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے کہا ہے کہ نوازشریف اور عمران خان کو پختونوں کے حقوق سے کوئی سروکار نہیں اور دونوں پارٹیوں کے سربراہوں نے تخت پنجاب کی لڑائی میں اپنی سیاست کا محورپنجاب کو بنا لیا ہے اور اقتدار کی لالچ میں خیبر پختونخوا کے عوام کچلا جا رہا ہے ، ان خیالات کا اظہار اُنہوں نے پی کے 31 سلیم خان کلے صوابی میں ایک ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک ، ضلعی صدر و ناظم صوابی امیر رحمان ، ضلعی جنرل سیکرٹری محمد اسلام خان سمیت دیگر نے بھی خطاب کیا۔ صوبائی صدر نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ نام نہاد تبدیلی کے جھوٹے دعوؤں سے عوام بے زارہوچکے ہیں اوران کی نظریں اے این پی پر لگی ہوئی ہیں ، انہوں نے کہا کہ آئندہ انتخابات میں پی ٹی آئی کو اپنی مقبولیت کا پتہ چل جائے گا ،نوجوان ہمارے ساتھ ہیں صوبائی حکومت کے پاس کوئی اختیا رنہیں ، اُنہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت بدترین مالی و انتظامی بحران کا شکار ہے اور بوکھلاہٹ کے اس عالم میں حکومت نے عوامی مسائل کو پس پشت ڈال دیا ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ اے این پی اپنے دور حکومت میں اپنے وسائل پر اختیار کو ممکن بنایا ، صوبے کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا ، روزگار کے مواقع پیدا کیے اور بدامنی کا ڈٹ کر مقابلہ کیا۔ اُنہوں نے کہا کہ صوبے میں خوشحالی اور ترقی کے بے مثال دور کا آغاز اے این پی کی مرہون منت ہے جبکہ تعلیم عام کرنے کیلئے بھی عملی طور پر اقدامات کیے گئے ۔ صوبائی صدر نے کہاکہ افسران ، سرکاری ملازمین ، عوام غرض ہر طبقہ فکر کے لوگ اس وقت موجودہ صوبائی حکومت کے خلاف احتجاج پر ہیں جبکہ اس کے برعکس کرپشن کے خلاف شور مچانے والی حکومت صوبائی احتسابی اداروں پر ہاتھ صاف کرنے کیلئے سرگرم ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ حکمران احتساب کمیشن اور اینٹی کرپشن سے اس لیے نالاں ہے کہ حکومت کی کرپشن کے بڑے پیمانے پر سکینڈلز منظر عام پر آ رہے ہیں موجودہ حکومت اپنے ناجائز اختیارات کا استعمال کر کے احتسابی اداروں پر وار کرنے پر تلی ہوئی ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ 2018 کے الیکشن میں عوامی نیشنل پارٹی اپنے سابق دور حکومت میں ترقی و خوشحالی کے دور کا دوبارہ سے آغاز کرے گی اور وہ دن دور نہیں جب صوبے کو ترقی کی راہ پر گامزن کر دیا جائیگا۔
امیر حیدر خان ہوتی نے کہا کہ خیبر پختونخوا کے عوام تبدیلی کے وعدوں اور دعوؤں کی حقیقت جان چکے ہیں اور صوبے کے نوجوان اور عوام تبدیلی کے دعویداروں کو بنی گالہ تک محدود کر کے دم لیں گے۔امیرحیدرخان ہوتی نے کہاکہ پختون جاگ گئے ہیں اوران حکمرانوں کے کرتوتوں کو جان چکے ہیں انہوں نے کہا کہ عوام اپنے ساتھ ہونے والی ناانصافیوں کا بدلہ چکادیں گے ۔ اُنہوں نے کہاکہ تبدیلی والوں کے دور میں ترقی کا پہیہ رک گیاہے اورتین سال گزرنے کے باوجود کوئی نیا منصوبہ شروع نہیں کیاگیا بلکہ ہمارے ترقیاتی منصوبوں پر اپنے نام کی تختیاں لگارہے ہیں۔انہوں نے مزید کہاکہ آنے والا دور اے این پی کا ہے۔