مورخہ : 5.4.2016 بروز منگل

مرکزی ، صوبائی حکومتیں اور اُن کے اتحادی ملاکنڈ ڈویژن کے عوام کے سامنے جوابدہ ہیں۔ امیر حیدر خان ہوتی
ملاکنڈ ڈویژن میں کسٹم ایکٹ کا نفاذ اس معاہدے کی خلاف ورزی ہے جو کہ ریاست اور حکومت پاکستان کے درمیان طے پایا تھا۔
علاقے کے عوام پہلے ہی سے دہشتگردی ، سیلاب اور زلزلے کی تباہ کاریوں کا سامنا کرتے آرہے ہیں۔
اے این پی عوام کے حقوق اور مفادات کے تحفظ کیلئے کسی قسم کی قربانی اور جدوجہد سے گریز نہیں کرے گی۔

پشاور ( پریس ریلیز) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ امیر حیدر خان ہوتی ایم این اے نے ملاکنڈ ڈویژن اور کوہستان میں کسٹم ایکٹ کے نفاذ پر تشویش اور شدید رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس ظالمانہ فیصلے میں دونوں حکومتیں اور ان کی اتحادی جماعتیں برابر کی شریک ہیں جبکہ یہ اقدام اس معاہدے کی کھلی خلاف ورزی ہے جو کہ ریاست سوات اور حکومت پاکستان کے درمیان علاقے کے ادغام کے وقت طے پایا تھا۔
اے این پی سیکرٹریٹ سے جاریکردہ بیان میں اُنہوں نے کہا ہے کہ سال 1969 کے ادغام کے وقت حکومت پاکستان اور ریاست سوات کے دوران طے پایا تھا کہ علاقے میں کوئی ٹیکس نہیں لگایا جائیگا اور علاقے کو بعض خصوصی مراعات بھی حاصل رہیں گی۔ حالیہ فیصلہ اس معاہدے اور وعدے کی کھلی خلاف ورزی ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن لمبے عرصے تک دہشتگردی اور بدامنی کی لپیٹ میں رہا۔ لوگوں نے لاکھوں کی تعداد میں نقل مکانی کی۔ حکومتی آپریشن میں ریاست کا ساتھ دیا اور بے پناہ قربانیاں دینے کے علاوہ سیلاب اور زلزلے کی تباہ کاریوں کا بھی سامنا کیا۔ اُنہوں نے کہا کہ ان مصائب اور مخصوص حالات کے تناظر میں دونوں حکومتوں کی ذمہ داری بنتی تھی کہ ملاکنڈ ڈویژن اور کوہستان کے عوام کی داد رسی کرتے ہوئے ان کی بحالی اور ترقی کیلئے خصوصی پیکجز کو عملی جامہ پہنایا جاتا اور ان کی سہولیات اور مراعات میں ترجیحی بنیادوں پر اضافہ کیا جاتا تاہم حکمران طبقے اور ان کے اتحادیوں نے عوام کی قربانیوں کا صلہ کسٹم ایکٹ کے نفاذ اور مراعاتی پیکجز کی واپسی کی صورت میں دیا جو کہ زیادتی اور ظلم ہے۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ اس ظالمانہ اقدام میں مرکزی اور صوبائی حکومتوں سمیت ان کے تمام اتحادی برابر کے شریک ہیں اس لیے ان کو عوام کے سامنے جوابدہ ہونا پڑے گا۔
اُنہوں نے تمام اضلاع میں اے این پی کے پر امن احتجاج پر پارٹی عہدیداروں اور کارکنوں کو مبارکباد دیتے ہوئے واضح کیا کہ اے این پی اس ظالامانہ حکومتی رویے کے خلاف عوام کیساتھ کھڑی رہے گی اور ان کے حقوق اور مفادات کے تحفظ کیلئے کسی قسم کی قربانی اور مزاحمت سے گریز نہیں کرے گی۔