مورخہ : 11 مئی 2016 بروز بدھ

بڑھتی ہوئی ٹارگٹ کلنگ ، اغواء برائے تاوان اور بھتہ خوری کے خلاف عملی اقدامات اُٹھانے ہونگے۔
دہشتگردی کے خلاف پولیس کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی۔
مردان میں پولیس اہلکار کے قتل پر دُکھ اور افسوس کا اظہار، امیر حیدر خان ہوتی

پشاور ( پریس ریلیز) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر امیر حیدر خان ہوتی نے مردان میں پولیس اہلکار کے قتل پر دُکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ دہشتگردی کے خلاف پولیس کی قربانیاں تاریخ کا حصہ بن چکی ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ روزانہ کی بنیاد پر ٹارگٹ کلنگ میں اضافہ قابل افسوس ہے ۔ اُنہوں نے کہا کہ پولیس اہلکاروں نے اپنی جانوں کے نذرانے دئیے اُن کے بچے یتیم ہو گئے ہیں لیکن پھر بھی ملک و قوم کی خاطر دہشتگردی کے خلاف جوانمردی سے لڑ رہے ہیں۔ اُنہوں نے دہشتگردی اور ٹارگٹ کلنگ کے خلاف صوبائی حکومت کی ناقص اور غیر ذمہ دارانہ روریہ کو بھی شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ صوبائی حکومت کو صوبے میں بڑھتی ہوئی ٹارگٹ کلنگ ، اغواء برائے تاوان اور بھتہ خوری کے واقعات کو سنجیدہ لینا چاہیے اور ان کی روک تھام کیلئے عملی اقدامات اُٹھانے کی فوری ضرورت ہے۔
اُنہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت کا بدامنی کے خلاف تماشائی کا کردار عوام کے زخموں پر نمک پاشی کے مترادف ہے جو کہ کسی صورت قابل قبول نہیں۔ اُنہوں نے مرحوم کی مغفرت اور لواحقین کو صبرو جمیل عطا کرنے کی دُعا کی۔