مورخہ : 12.5.2016 بروز جمعرات

ماضی میں حکمرانوں نے کراچی کی گلیوں اور سڑکوں کو خون میں نہلایا۔ اسفندیار ولی خان
سانحہ 12 مئی کی جوڈیشنل انکوائری آج تک نہ ہو سکی۔
دہشتگردی کسی بھی شکل میں ہو اے این پی ہمیشہ اُس کے خلاف آواز بلند کرتی رہے گی۔

پشاور (پریس ریلیز) عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی خان نے اپنے بیان میں 12مئی2007کو سیاہ دن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ماضی کے حکمرانوں نے کراچی کی گلیوں اور سڑکوں کو خون میں نہلا دیا لیکن بد قسمتی سے آج تک کوئی جوڈیشنل انکوائری نہ ہو سکی اور نہ ہی آذاد ذرائع کے ذریعے تحقیقات ہوئیں۔شہداء کے لواحقین آج بھی انصاف کے متلاشی ہیں ۔اسفند یار ولی خان نے کہا کہ 12مئی کے شہداء اور ان کے لواحقین کے ساتھ اظہاریکجہتی کیلئے اے این پی سندھ آج یوم سیاہ منا رہی ہے اور کہا کہ دکھ کی بات ہے کہ آزاد عدلیہ کیلئے جدو جہد کرنے والے وکلاء کو براہ راست فائرنگ کر کے شہید کیا گیا ۔موجودہ عدلیہ سے اے این پی توقع رکھتی ہے کہ سانحہ12مئی کا ازخود نوٹس لے کر وحشیانہ کاروائی کرنے والے مجرمین کو انصاف کے کٹہرے میں لا کر نشان عبرت بنایا جائیگا۔اسفند یار ولی خان نے کہا کہ سول سوسائٹی ،وکلاء تنظیمیں ،انسانی حقوق کی تنظیمیں اور تمام سیاسی جمہوری قوتیں دہشت گردی کے گھناؤنے واقعے کے خلاف آواز بلند کریں۔اسفند یار ولی خان نے کہا کہ دہشت گردی کسی بھی شکل میں ہو اے این پی ہمیشہ اس کے خلاف آواز بلند کرتی رہیگی۔انہوں نے 12مئی کے شہداء کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے لواحقین سے دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ لواحقین کے دکھ درد میں عملی شرکت کیلئے اے این پی آج سندھ بھر میں یوم سیاہ منا رہی ہے۔