مورخہ : 21.3.2016 بروز پیر

فاٹا میں اصلاحات دیرپا قیام امن کیلئے ناگزیر ہے۔ عمران آفریدی
قبائلی علاقے کا مستقبل باشعور نوجوانوں کے سیاسی کردار سے وابستہ ہے۔ سنگین خان ایڈوکیٹ

پشاور ( پریس ریلیز) نیشنل یوتھ آرگنائزیشن خیبر ایجنسی کے زیر اہتمام ایک پروقار تقریب گزشتہ روز زیر صدارت ضلعی صدر نصیر خان منعقد ہوئی جس میں تحصیل باڑہ کیلئے بنیادی ذیلی تنظیموں کے قیام کیلئے آرگنائزنگ کمیٹی کا قیام عمل میں لایا گیا۔ تقریب میں عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی نائب صدر عمران آفریدی اور نیشنل یوتھ آرگنائزیشن کے صوبائی صدر سنگین خان ایڈوکیٹ نے خصوصی طور شرکت کی۔ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے عمران آفریدی نے کہا کہ ملک اور خطے میں دیر پا امن کا قیام فاٹا میں سیاسی اور انتظامی اصلاحات کیساتھ وابستہ ہے اور ریاست کو مزید وقت ضائع کیے بگیر سنجیدہ اقدامات لینے چاہئیں۔اُنہوں نے کہا کہ فاٹا کے عوام نے دور ابتلا سے گزر کر شعوری طور پر اصلاحات کیلئے آواز اُٹھائی لیکن آج بھی مراعات یافتہ ٹولے اس آواز کو دبانے کے درپے ہیں۔ لہٰذا حکومت کو مزید وقت ضائع کیے بغیر جامع اصلاحات کرنے چاہئیں۔
اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے سنگین خان ایڈووکیٹ نے کہا کہ قبائلی علاقے کے نوجوان بھی فاٹا کے سیاسی مستقبل کے امین ہیں اور فاٹا میں برطانوی راج کے فرسودہ نظام کے خاتمے کیلئے نوجوانوں کا کردار کافی اہم ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ قبائلی علاقے میں بنیادی انسانی حقوق کی بحالی اور علاقے کا صوبے میں انضمام ناگزیر ہو چکا ہے اور نوجوانوں کو اپنا سیاسی کردار ادا کرتے ہوئے ’’ ماجب پرست ‘‘ مخصوص ٹولے کا مکروہ چہرہ بے نقاب کرنا چاہیے۔ اُنہوں نے کہا کہ نیشنل یوتھ آرگنائزیشن کا پارٹی پالیسی کے عین مطابق فاٹا میں اصلاحات اور ایف سی آر کا خاتمہ سر فہرست ایجنڈا ہے اور قبائلی علاقے کے نوجوانوں کو سرخ پرچم تلے متحد کر کے عوامی مفادات اور اُن کے حقوق کے تحفظ کیلئے جدوجہد جاری رکھے گی۔ اجتماع سے خیبر ایجنسی کے صدر نصیر خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔