مورخہ 30مارچ 2016ء بروز بدھ
عوامی نیشنل پارٹی اپنے اسلاف کے افکار کو مشعل راہ گردانتی ہے،امیر حیدر خان ہوتی
پختون قومی تحریک کو پروان چڑھانے میں عاصی ہشتنگری جیسے قلم کاروں کے کردار کو فراموش نہیں کیاجاسکتا
پشتو زبان کی ترقی کے لیے عاصی مرحوم کی خدمات کو تاریخ میں سنہری حروف سے لکھا جائے گا
مرحوم مرتے دم تک باچاخان کے سچے پیروکاراور ولی خان کے عقیدت مند رہے
پشتو کے معروف قوم پرست شاعر،ادیب اور صحافی عاصی ہشتنگری کی انیسویں برسی پرصوبائی صدرکاپیغام
پشاور(پ،ر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر اور سابق وزیراعلیٰ امیرحیدرخان ہوتی نے کہا ہے کہ پشتو زبان کی ترقی و ترویج اور پختونوں کے حقوق کے حصول کے لیے مرحوم عاصی ہشتنگری کی خدمات کو پختونوں کی تاریخ میں سنہری حروف سے لکھا جائے گا، اے این پی سیکرٹریٹ سے جاری کردہ بیان میں صوبائی صدر نے پشتو زبان کے معروف قوم پرست اور ترقی پسند شاعر،ادیب اور صحافی عاصی ہشتنگری کی انیسویں برسی کے حوالے سے کہا کہ عاصی ہشتنگری نے بطور شاعر،ادیب اور صحافی ہمیشہ اپنی قوم میں آزادی،امن اور ترقی کا شعور اجاگرکیااور اپنی مٹی سے پیارکرنے کا درس دیاہے،انہوں نے ملک میں جمہوریت کی بحالی اور امریت کے خلاف ہمیشہ قلمی جہاد جاری رکھا جس کی پاداش میں بہت سی مشکلات بھی برداشت کیں تاہم اپنے نظریات پر قائم رہے،مرحوم مرتے دم تک فخرافغان باچاخان کے ایک سچے پیروکار، خان عبدالولی خان اور اجمل خٹک کے وفادار ساتھی رہے،مرحوم کاشمار ان پختون قوم پرست اور ترقی پسند شعراء میں ہوتاہے جنہوں نے مالی تنگدستی،غربت، ہرقسم مشکلات اور جلاوطنی کی زندگی گزارنے کے باوجود اپنے نظریے کا دیا جلائے رکھا ان کی شاعری دنیا کے تمام مظلوم و محکوم اقوام کی ترجمان اور عکاس ہے،ان کا مجموعہ کلام’’تودہ وینہ‘‘ پختون قوم پرستی کے لیے ایک رہنما کتاب کا درجہ رکھتاہے،انہوں نے کہا عوامی نیشنل پارٹی اپنے اسلاف اور محسنوں کو ہمیشہ یاد رکھے گی اور ان کے افکار کو مشعل راہ گردانتی ہے،انہوں نے کہا پختون قومی تحریک کو پروان چڑھانے میں عاصی ہشتنگری جیسے قلم کاروں کے کردار کو فراموش نہیں کیاجاسکتا،اے این پی اپنے قلم کاروں کوقومی سرمایہ سمجھتی ہے اور ان کی خدمات کا ہمیشہ اعتراف کرتی رہے گی۔