مورخہ : 23.4.2016 بروز ہفتہ

صوبے پر ایسے حکمران قابض ہیں جن کو عوام کے مفادات اور حقوق سے کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ بشریٰ گوہر
شورش زدہ صوبے کو بدترین بدامنی ، لاقانونیت اور بیڈ گورننس کا سامنا ہے۔
عوام جان چکے ہیں کہ اے این پی خطے کی مضبوط عوامی قوت ہے۔ پی کے 8 میں انتخابی اجتماع سے خطاب

پشاور ( پریس ریلیز) عوامی نیشنل پارٹی کی مرکزی نائب صدر اور سابق ایم این اے بشریٰ گوہر نے کہا ہے کہ صوبے کے عوام تبدیلی کے نام پربر سر اقتدار آنے والی پارٹی اور ان کے اتحادیوں کی صوبہ کش پالیسیاں اور منفی رویے دیکھ چکے ہیں اور ان پر یہ بات واضح ہو گئی ہے کہ موجودہ حکومت کو صوبے کے مفادات اور عوام کے حقوق سے کوئی دلچسپی نہیں ہے۔
پی کے 8 کے ڈاک یونین کونسل میں اے این پی کے اُمیدوار اعجاز احمد سیماب کے ایک انتخابی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے اُنہوں نے کہا کہ اے این پی پشتونوں اور خطے کے عوام کی ترجمان اورنمائندہ سیاسی قوت ہے تاہم ایک منصوبے کے تحت 2013 کے الیکشن میں اس عوامی قوت کو عوام کی نمائندگی سے محروم کیا گیا اور ایسے لوگوں کو صوبے پر مسلط کیا گیا جن کو صوبے کے حقوق اور مفادات سے کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ صوبے کو بدترین بدامنی ، لاقانونیت اور بیڈ گورننس کا سامنا ہے اور محسوس یہ ہو رہا ہے جیسے برسراقتدار ٹولہ صوبے کے عوام سے انتقام لینے پر تلے ہوئے ہو۔ اُنہوں نے کہا کہ تمام تر رکاوٹوں اور سازشوں کے باوجود اے این پی آج بھی اس صوبے اور خطے کی سب سے مضبوط اور باجرأت سیاسی قوت ہے اور یہی وجہ ہے کہ عوام اسے اپنے حقوق کی نگہبان پارٹی سمجھتے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ پی کے 8 سے اے این پی کے اُمیدوار کامیاب ہوں گے اور عوام ان پر اعتماد کر کے حکمران ٹولے کا سیاسی محاسبہ کریں گے۔ اجتماع سے اعجاز احمد سیماب ، ملک نسیم خان اور گلریز خان نے خطاب کیا۔