مورخہ : 2.3.2016 بروز بدھ

صوبائی حکومت عوام کی مشکلات میں مزید اضافے کی پالیسی پر گامزن ہے۔ حاجی غلام احمد بلور

دو ہزار دو سو  کاروباری مراکز اور حلقوں کو حکومت نوٹس جاری کرنے کے اقدام کی کھلی مزاحمت کی جائیگی۔
عوام کو موجودہ حکمرانوں کی زیادتیوں اور منفی پالیسیوں کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑا جائیگا۔

پشاور ( پریس ریلیز) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سینئر نائب صدر اور رکن قومی اسمبلی حاجی غلام احمد بلور نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی صوبائی حکومت عوام کی حالت بہتر بنانے کی بجائے عوام کی مشکلات میں مزید اضافے کی پالیسی پر گامزن ہے ۔ تاہم عوام کو موجودہ حکمرانوں کی زیادتیوں کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑا جائے گا اور اے این پی ہر صورت میں عوام کے حقوق کیلئے ان کے شانہ بشانہ رہے گی۔
اے این پی سیکرٹریٹ سے جاری کردہ بیان میں اُنہوں نے حکومت کی جانب سے پشاور کے 2200 کاروباری افراد ، دکانوں ، ریسٹورنٹس ، پلازوں اور ہوٹلوں کو خالی کرنے کے نوٹسسزپر شدید رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کا کام عوام اور مختلف طبقوں کو تحفظ دیکر ان کی آسانیوں اور سہولیات میں اضافہ کرنا ہوتا ہے ۔ تاہم موجودہ حکمران پہلے ہی سے مشکلات کے شکار عوام کو تباہ کرنے پر تلے ہوئے ہیں اور آئے روز ایسے اقدامات اُٹھا رہی ہے جس کے باعث کاروباری حلقوں کیلئے جینا مشکل بنا دیا گیا ہے حالانکہ تاجر ، دُکاندار اور باقی حلقے پہلے ہی سے مشکلات کا سامنا کرتے آ رہے ہیں۔
اُنہوں نے کہا کہ روزگار چھیننے کا حق کسی کو حاصل نہیں ہے اور ہر ایسی حکومتی کوشش کی مخالفت اور مزاحمت کی جائیگی جس کا مقصد عوام کی مشکلات میں اضافے کا راستہ ہموار ہو رہا ہو۔ اُنہوں نے کہا کہ اے این پی حالیہ حکومتی نوٹسسز کی مذمت کرتی ہے اور شہر کے متعلقہ حلقوں کو یقین دہانی کراتی ہے کہ ان کے حقوق کے تحفظ کیلئے ہر قدم پر ان کے ساتھ کھڑی رہے گی۔