مورخہ 26اپریل2016ء بروز منگل

صحت کا انصاف پروگرام ڈھونگ ثابت ہوا ،ہسپتالوں کی حالت نا گفتہ بہ ہے، سید عاقل شاہ
ہسپتالوں میں کروڑوں روپے مالیت کی مشینیں خراب پڑی ہیں ، غریب مریضوں کو تکلیف کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے
ہسپتالوں میں بنیادی سہولیات و ادویات نہ ہونے کی وجہ سے انسانی جانوں کا ضیاع روزانہ کا معمول بن گیا ہے

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی سینئر نائب صدر سید عاقل شاہ نے لیڈی ریڈنگ ہسپتال میں مریضوں کی حالت زار پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کروڑوں روپے مالیت کی مشینیں ہسپتال میں خراب پڑی ہیں جس کی وجہ سے غریب مریضوں کو تکلیف کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے ، اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت صحت کے انصاف کی تشہیر کے نام پر کروڑوں روپے خرچ کر چکی ہے لیکن حالت یہ ہے کہ کسی کو ادویات تک فراہم نہیں کی جاتیں ،انہوں نے کہا کہ افسوسناک امر یہ ہے کہ صوبائی حکومت نے دوسرے شعبوں کی طرح شعبہ صحت کو بھی اپنی روایتی تنگ نظر ی کے باعث سست روی کی بھینٹ چڑھا دیا ہے اور عوام کو صحت کی مناسب سہولیات فراہم نہیں کی جا رہیں ، انہوں نے کہا کہ اے این پی ایک عرصہ سے حکمرانوں کی توجہ اس جانب مبذول کرانے کی کوشش کرتی رہی ہے تاہم حکمرانوں کو اس نازک صورتحال کا ذرا بھی ادراک نہیں اور حکومت کی بے حسی کے باعث آئے روز معصوم جانیں ضائع ہو رہی ہیں ، انہوں نے کہا کہ صحت کا انصاف پروگرام محض ڈھونگ ثابت ہوا اور عوام کے کروڑوں روپے اس پروگرام کی تشہیر پر اڑا دیئے گئے ، انہوں نے حکومت کی ہیلتھ پالیسی اور کارکردگی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت کو صوبے اور عوام کے مسائل سے کوئی غرض نہیں ہے وہ اپنی توانائیاں غیر ضروری کاموں پر خرچ کرنے میں لگے ہوئے ہیں اور ہسپتالوں میں بنیادی سہولیات و ادویات میسر نہ ہونے کی وجہ سے انسانی جانوں کا ضیاع روزانہ کا معمول بن گیا ہے ،انہوں نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا کہ غیر ضروری کاموں میں وقت ضائع کرنیکی بجائے عوام کی حالت زار پر توجہ دیں اور خصوصاً ہیلتھ پالیسی کو فعال بنا کر ہسپتالوں میں بنیادی ضروریات کی فراہمی کیلئے مناسب اور ٹھوس اقدامات کرے ۔