2016 سیاسی نابالغ دوسروں پر الزامات لگانے سے پہلے اپنے گریبان میں جھانکیں، ہارون بشیر بلور

سیاسی نابالغ دوسروں پر الزامات لگانے سے پہلے اپنے گریبان میں جھانکیں، ہارون بشیر بلور

سیاسی نابالغ دوسروں پر الزامات لگانے سے پہلے اپنے گریبان میں جھانکیں، ہارون بشیر بلور

مورخہ 31جنوری 2016ء بروز اتوار
سیاسی نابالغ دوسروں پر الزامات لگانے سے پہلے اپنے گریبان میں جھانکیں، ہارون بشیر بلور
اے این پی کی قربانیاں تاریخ کا حصہ ہیں جبکہ کپتان اپنے ہسپتال میں دہشت گردوں کا علاج کرتے رہے
ہمارے اکابرین پر الزامات لگانے والے بتائیں پختونوں کے سروں کا سودا اب کتنے میں کیا ہے
شجر کاری مہم میں مصروف8 عوام کی جان و مال کے تحفظ سے غافل ہیں،پی ٹی آئی کی سیاست جھوٹ اور منافقت پر مبنی ہے

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی سیکرٹری اطلاعات ہارون بشیر بلور نے پی ٹی آئی رہنما شوکت یوسفزئی کی جانب سے اسفندیار ولی خان کے خلاف ہرزہ سرائی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ تحریک انصاف سیاسی نابالغوں کی جماعت ہے اور دوسروں پر الزامات لگانے سے پہلے انہیں اپنے گریبان میں جھانکنا چاہئے ، اے این پی سیکرٹریٹ سے جاری بیان میں ہارون بشیر بلور نے کہا کہ اے این پی کی تاریخ قربانیوں سے بھری پڑی ہے جبکہ ان کے قائد ہمیشہ طالبان سے نہ صرف دوستی کا حق ادا کرتے رہے یہاں تک کہ اپنے ہسپتال میں دہشت گردوں کو پناہ دے کر ان کا علاج کرتے رہے ، انہوں نے کہا کہ سوات میں قیام امن کیلئے جو قربانیاں اے این پی نے دیں وہ کسی دوسری سیاسی جماعت کے بس کی بات نہیں ، صوبائی ترجمان نے کہا کہ اے این پی اور اس کے قائدین پر الزامات لگانے والے اپنی تین سالہ حکومت کا جائزہ لیں اور قوم کو بتائیں کہ اب پختونوں کے سروں کا سودا کتنے میں کیا ہے ، کیونکہ انٹیلی جنس اداروں کی پیشگی اطلاع کے باوجود صوبے کی سیکورٹی پر کوئی توجہ نہیں دی گئی جس کے نتیجے میں قیمتی انسانی جانوں کا ضیاع ہوا ، انہوں نے کہا شجرکاری مہم سے زیادہ عوام کی جان و مال کا تحفظ ہے جس میں تحریک انصاف مکمل ناکام ہو چکی ہے اور اب عوام انہیں ووٹ دینے پر پچھتا رہے ہیں،انہوں نے مزید کہا کہ تحریک انصاف نے نئے پاکستان اور تبدیلی کا جو نعرہ لگایا وہ عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کیلئے کافی ہے ،انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی سیاست جھوٹ اور منافقت پر مبنی ہے جبکہ اس جماعت نے عوام کے مینڈیٹ کی توہین کی ہے ،انہوں نے کہا کہ اے این پی کی تعلیم ، صحت ،روزگار اور صوبہ کے حقوق کے حوالے سے کارکردگی اپنی مثال آپ ہے،اور یہی وجہ ہے کہ آج عوام صوبائی حکومت کی کارکردگی سے متنفر ہو چکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اے این پی کے کارکن عدم تشدد کے فلسفے پر کاربند ہیں تاہم اسے ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے اور پی ٹی آئی کے رہنما ہمارے اکابرین کے خلاف الزامات لگانے سے گریز کریں،

شیئر کریں