16.3.2016 anp pic

مورخہ : 16.3.2016 بروز بدھ

دہشتگردوں کے حمایت یافتہ سیاستدانوں ، حکومتوں سے امن لانے کی توقع عبث ہیں۔ سردار حسین بابک
نواز شریف اور عمران خان پنجاب کے مفادات کے محافظ ہیں۔ صوبے کو دہشتگردوں کے رحم و کرم پر چھوڑا گیا ہے۔
اسلام کے ٹھیکیداروں نے خطے کو میدان جنگ میں تبدیل کیا ۔ ہم نے امن کی بڑی بھاری قیمت چکائی ہے۔
عمران خان کو پشتونوں کے مفادات سے کوئی دلچسپی نہیں ہے ۔ شانگلہ میں ورکرز کنونشن سے خطاب

پشاور( پریس ریلیز ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ عمران خان اور نواز شریف عملاً پنجاب اور اس کے مفادات کی سیاست کر رہے ہیں اس لیے ان کو نہ تو دہشتگردی کے مسئلے کے حل کی فکر ہے اور نہ ہی صوبے کے مفادات کا تحفظ ان کی ترجیحات میں شامل ہے۔ اسی رویے کا نتیجہ ہے کہ صوبہ اب بھی دہشتگرد حملوں کی لپیٹ میں ہے اور حکمرانوں کو مزاحمت تو دور کی بات دہشتگردوں کی کھلی مذمت کی جرأت بھی نہیں ہو رہی ہے۔
شانگلہ میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے اُنہوں نے کہا کہ اسلام کے ٹھیکیداروں نے 40 سال سے پشتون سرزمین کو میدان جنگ میں تبدیل کر دیا ہے۔ ہمارے اکابرین نے ماضی میں روس امریکہ کو جنگ کا حصہ بننے سے گریز کا مشورہ دیا تو ان کو غدار کہا گیا مگر بعد میں اس جنگ نے ہم سب کو لپیٹ میں لیا اور ہم آج بھی اس کے نتائج بھگت رہے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ کل جب ہم اپنی جانوں کی قربانی دیکر دہشتگردی کی مزاحمت کر رہے تھے تو الزام لگایا گیا کہ ہم امریکہ سے ڈالر لے رہے ہیں۔ ہماری حکومت کے خاتمے کے باوجود ہماری سرزمین دہشتگردی کا شکار ہے۔ اب تو حالت یہ ہو گئی ہے کہ عدالتوں ، سکولوں اور بسوں میں بھی دھماکے کرائے جا رہے ہیں۔
اُنہوں نے مزید کہا کہ اے این پی نے پشتونوں اور امن کے لیے بھاری قیمت چکائی ہے تاہم اس کا صلہ ہمیں یہ دیا گیا کہ ایک سازش کے تحت 2013 کے الیکشن میں ہمیں پارلیمانی نمائندگی سے محروم کیا گیا اور اختیار ایک ایسے شخص کو دیا گیا جن کا صوبے میں گھر بھی نہیں ہے۔ اور وہ پنجاب کے مفادات کی جنگ لڑتے آئے ہیں۔اُنہوں نے کہا کہ ایسے لیڈروں سے امن یا صوبے کے مفادات کے تحفظ کی توقع نہیں کی جا سکتی جو دہشتگردوں کی مذمت بھی نہیں کر سکتے اور جن کا مقصد پنجاب کے مفادات کا تحفظ ہے۔ اسی رویے کا نتیجہ ہے کہ شہباز شریف اپنے صوبے میں آپریشن کی اجازت بھی نہیں دے رہا اور وزیر اعظم ہمارے ایشوز سے لاتعلقی کی پالیسی پر عمل پیرا ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ الیکشن میں ہرانے کے باوجود اے این پی کو عوام کے دلوں سے نہیں نکالا جاسکا۔ اب عوام بھی جان چکے ہیں کہ اے این پی ہی ان کے حقوق کی ضامن قوت ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ عمران خان کی تبدیلی کے دعوے جھوٹ پر مبنی ہیں ۔ اُنہوں نے نہ تو بلدیاتی اداروں کو اختیارات منتقل کیے ، نہ ڈیم بنائے ، نہ تعلیم کو فروغ دیا اور نہ سی پیک میں صوبے کے حقوق کی آواز اُٹھائی۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ ہم جلسے نہیں کر رہے بلکہ جرگے کر رہے ہیں تاکہ عوام کو سنگین حالات سے آگاہ کر کے اُن کے حقوق ، مفادات اور امن کے قیام کو ممکن بنایا جائے اور مستقبل کا لائحہ عمل اپنایا جائے ۔ کنونشن سے صوبائی نائب صدر جاوید خان یوسفزئی ، صوبائی جائنٹ سیکرٹری نثار خان ، ضلعی صدر حاجی سید فرین خان اور دیگر رہنماؤں نے بھی خطاب کیا۔