مورخہ : 29.2.2016 بروز پیر

خیبر پختونخوا اور پختونوں کے حقوق عقب ہونے کی کسی کو اجازت نہیں دینگے۔ زاہد خان
عمران خان وزارت عظمیٰ کا خواب دیکھ رہے ہیں۔ سراج الحق صوبے کے حقوق کا سودا کرنے میں مصروف ہیں۔
اے این پی نے بجلی کے خالص منافع کے 389 ارب روپے وفاق سے منوا لیے تھے۔

پشاور(پریس ریلیز ) عوامی نیشنل پارٹی کے سیکرٹری اطلاعات زاہد خان نے مشترکہ مفادات کے کونسل کے اجلاس میں صوبہ خیبر پختونخواہ کے بجلی کے خالص منافع کی 70ارب روپے کی رقم کی ادائیگی پر متفق ہونے کو صوبائی حکومت تحریک انصاف،جماعت اسلامی اقومی وطن پارٹی کی طرف سے اسے صوبہ خیبر پختون خواہ اور پختونوں سے دشمنی قرار دیا ہے۔زاہد خان نے مزید کہا ہے کہ عوامی نیشنل پارٹی کی حکومت نے وفاق سے بجلی کا خالص منافع 389ارب وفاق سے منوا لیا تھا اور 6ارب کے کیپ کو بھی نہیں مانا تھا۔ایم ایم اے کی حکومت نے وزیر خزانہ سراج الحق نے 110ارب روپے مان کر جنرل مشرف کے زمانے میں صوبے کا سودا کیا اور اب دوبارہ 70ارب روپے کی قلیل رقم تسلیم کر کے پھر پختون دشمنی کا ثبوت دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ صوبہ خیبر پختون خواہ اور پختونوں کے حقوق کسی کو غصب کرنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔صوبے اور پختونوں کے حقوق کی جنگ جاری رکھیں گے۔زاہد خان نے کہا کہ عمران خان پنجاب کی خوشنودی حاصل کر کے وزارت عظمی کا خواب دیکھ رہے ہیں اور سراج الحق بھی اپنے ذاتی مفادات کیلئے وفاق سے صوبے کے حقوق کا سودا کر رہے ہیں لیکن اے این پی کو پختونوں کے نام نہاد رہنما آفتاب شیر پاؤ کی مفاد پرستی پر افسوس ہے ۔اے این پی ہر فورم پر صوبے اور پختونوں کے حقوق کی آواز بلند کرتی رہیگی۔