2016 حکومت کی غیر سنجیدگی کے باعث دہشتگرد جب اور جہاں چاہے حملے کرنے لگے ہیں۔ سردار حسین بابک

حکومت کی غیر سنجیدگی کے باعث دہشتگرد جب اور جہاں چاہے حملے کرنے لگے ہیں۔ سردار حسین بابک

حکومت کی غیر سنجیدگی کے باعث دہشتگرد جب اور جہاں چاہے حملے کرنے لگے ہیں۔ سردار حسین بابک

مورخہ : 23.1.2016 بروز ہفتہ

حکومت کی غیر سنجیدگی کے باعث دہشتگرد جب اور جہاں چاہے حملے کرنے لگے ہیں۔ سردار حسین بابک
پختون اپنے پیاروں کے جنازوں کو کندھے دیکر تھک چکے ہیں۔ حکومتی غیر سنجیدگی ناقابل بارداشت ہے۔
حکومت مذمتی بیانات سے نکل کر عملی اقدامات پر توجہ دے۔ شہید طالب العلم ساجد حسین کی فاتحہ خوانی کے موقع پر گفتگو۔

پشاور ( پریس ریلیز) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنر ل سیکرٹری وپارلیمانی لیڈر سر دار حسین بابک نے کہا ہے کہ دہشت گر دی کے خلاف حکومت کی غیر سنجیدگی مذید بر داشت سے باہر ہے۔پختون قوم اپنے پیاروں کے جنازوں کو کندھے دے دے کر تھک چکی ہے۔دہشت گر د تعلیمی اداروں پر حملے کر کے پختون قوم کو جہالت کے اندھیروں میں دھکیلنا چاہتی ہے ۔دہشت گر دوں کے مذموم مقاصد کے خلاف پوری قوم متحد ہے تاہم اب عملی اقدامات کی ضرورت ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے باچا خان یونیورسٹی چارسدہ میں دہشت گر دوں کے حملے میں شہید ہونے والے تحصیل مندنڑ کے گاؤں کوریا کے طالب علم ساجد حسین کے والد سے تعزیت کے موقع پر اظہار خیال کر تے ہوئے کیا۔اس موقع پر صوبائی جائنٹ سیکرٹری نثار خان ،تحصیل مندنڑ کے نائب ناظم اشتر خان،نصیب خان،تحصیل کونسلر شیبر خان ،یعقوت خان اور دیگر بھی موجود تھے۔
سردار حسین بابک نے مذید کہا کہ پختون قوم کو کس جر م کی سزا دی جارہی ہے وہ ہمیں بتایا جائے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی غیر سنجید گی کو دیکھ کر دہشت گر د جب ،جہاں اور جس کو چاہے ٹارگٹ کر سکتے ہیں ۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت دہشت گردی کے خلاف متحد ہو جائے اور عوام کی جان و مال کو تخفظ فراہم کر یں ۔انہوں نے کہاکہ دہشت گر دی کے خلاف پوری قوم متحد ہے اور ہم دہشت گردوں کے مذموم مقاصد کو کامیاب نہیں ہو نے دینگے لیکن حکومت مذمتی بیانات سے نکل کر عملی اقدامات پر توجہ دے۔اس موقع پر انہوں نے شہید کے والد کو تسلی دی کہ پوری قوم اور اے این پی کے کارکن تمام شہداء اور متاثرین کے دُکھ درد میں برابر کی شریک ہے۔

شیئر کریں